اقدامات کا جائزہ لینے کیلئے مسئلہ کشمیر پر کمیٹی بنائی جائے، ر ضا ر با نی

اقدامات کا جائزہ لینے کیلئے مسئلہ کشمیر پر کمیٹی بنائی جائے، ر ضا ر با نی

  

کراچی(آئی این پی)مقبوضہ کشمیر میں مسلمانوں کو مار ا جا رہا ہے‘ مسلمان خواتین کی عزت لوٹی جا رہی ہے،مسلمان بچوں کی بینائی چھینی جا رہی ہے تو مسلم امہ کہاں ہے،او آئی سی کا ایک بیان نہیں آ سکا کہ وہ کہے بھارت مقبوضہ کشمیر میں جارحیت کر رہا ہے‘ کشمیر کا مسئلہ مختلف ڈگریز میں پہلے ہی انٹرنیشنل ہے،عین ممکن ہے کہ مودی کی پالیسی کی وجہ سے آئندہ بھارت کی ضرورت امریکہ کو اتنی نہ رہے۔ جمعہ کے روز سینیٹر رضا ربانی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں مفادات کی خاطر بنیادی انسانی حقوق کا سودا کرنے والے روایتی ملکوں کی طرف نہیں دیکھنا چاہیے۔ اگر دنیا میں کہیں مسلمانوں کی بات ہوتی ہے تو ہم مسلم امہ کیلئے تیار ہوتے ہیں۔ میری چیئرمین سینٹ کے توسط سے تجویز ہے کہ وقت آگیا ہے کہ پاکستان او آئی سی سے نکل جائے۔ خطے کی آئندہ کی صورتحال سے متعلق ہمارے اسٹریٹجک پلاننگ کرنے والے کیا اس پر سوچ رہے ہیں۔ عین ممکن ہے کہ نریندر مودی کی پالیسی کی وجہ سے آئندہ بھارت کی ضرورت امریکہ کو اتنی نہ رہے۔ اگر بھارت میں ٹوٹ پھو ٹ ہوتی ہے تو ہمارے یہاں کیا صورتحال ہو گی۔ جہاں بھی جو سوچ بچار ہو رہی ہے پارلیمان اس کے اندر ہونی چاہیے۔ کشمیر کے مسئلے پر پورے ایوان کی کمیٹی بنائی جائے تاکہ ہم  ان اقدامات کا جائزہ لے سکیں جو ہمیں کرنے ہیں۔ مسئلہ کشمیر کی صورتحال فلسطین کی طرح ہو رہی ہے۔ 

 رضا ربانی

مزید :

صفحہ آخر -