لاہور مال روڈ کی ”فضا کشمیر بنے گا پاکستان“ کے نعروں سے گونج اٹھی 

    لاہور مال روڈ کی ”فضا کشمیر بنے گا پاکستان“ کے نعروں سے گونج اٹھی 

  

لاہور (نمائندہ خصوصی) وزیر اعظم عمران خان کی ہدایت پر ملک بھر کی طرح مقبوضہ کشمیر کے نہتے عوام سے اظہار یکجہتی کرنے کیلئے صوبائی دارالحکومت کے عوام کا ایک جم غفیر بھی سڑکوں پر نکل آیا اور اس موقع پر مال روڈ کی فضاء کشمیر بنے گا پاکستان کے نعروں سے گونج اٹھی،ریلیوں میں شریک بچوں، بوڑھوں، نوجوانوں اورسرکاری ملازمین سمیت خواتین کی بڑی تعداد نے ہاتھوں میں سبز ہلالی پرچم اور کشمیر کے جھنڈے بھی اٹھا رکھے تھے۔ دن بارہ بجے سے ساڑھے بارہ بجے تک کے وقفے کے دوران لاہور بھر میں سینکڑوں اظہار یکجہتی کشمیر ریلیاں نکالی گئیں۔ اس سلسلے میں مرکزی تقریب چیئرنگ کراس مال روڈ پر منعقد ہوئی۔ جس میں وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار، گورنر پنجاب چودھری محمد سرور سمیت صوبائی وزراء، ارکان اسمبلی اور تمام مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والی ممتاز شخصیات کی بہت بڑی تعداد نے شرکت کی۔ دن کے بارہ بجتے ہی شہر بھر میں مقبوضہ کشمیر کے عوام سے اظہار یکجہتی کیلئے سائرن بجائے گئے۔ دوپہر بارہ بجکر ایک منٹ پر عوام کے جم غفیر نے یک زبان ہو کر قومی ترانہ اور کشمیر کا ترانہ پڑھا۔ اس دوران شہر بھر کے ٹریفک سگنل سرخ کر دئیے گئے اور شہر کی ٹریفک پانچ منٹ کیلئے رک گئی۔ ملک بھر میں چلنے والے مسافر ٹرینیں جہاں جہاں سے گزر رہی تھیں وہاں وہاں پانچ منٹ کیلئے روک دی گئیں۔ تقریب کے دوران جیسے ہی ساڑھے بارہ بجے تو وزیر اعلیٰ پنجاب نے مقبوضہ کشمیر کے عوام کی آزادی کے لئے خصوصی دعا کروائی۔ کشمیری عوام سے اظہار یکجہتی کے موقعہ پر شہر بھر میں ہر طرف سبز ہلالی پرچم اور کشمیری جھنڈوں کی بہار دکھائی دیتی رہی۔ قبل ازیں شہر بھر سے مختلف طبقہ فکر کے تعلق رکھنے والے لوگوں کی ریلیاں فیصل چوک پہنچتی رہیں۔ ریلیوں کے شرکاء نریندر مودی مردہ باد، کشمیر بنے گا پاکستان کے نعرے بلند کرتے رہے۔ اس موقع پر سکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے تھے۔ ریلیوں کے شرکاء نے جہاں اظہار یکجہتی کشمیر کیلئے آواز اٹھائی وہاں پولیس کے جوانوں نے بھی نریندر مودی مردہ باد کے نعرے لگائے اور ان نعروں میں عوام بھی شامل ہو گئی۔ مال ر وڈ پر فیصل چوک میں یوم یکجہتی کشمیر پر بڑے عوامی اجتماع میں وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار اور گورنر پنجاب چودھری محمد سرورنے شرکت کی۔تحریک انصاف پنجاب کے صدر اعجاز چودھری، صوبائی وزراء راجہ بشارت، میاں اسلم اقبال، یاسر ہمایوں، عنصر مجید خان، ہاشم جواں بخت،ڈاکٹر اخترملک،چیف سیکرٹری، انسپکٹر جنرل پولیس،پرنسپل سیکرٹری وزیراعلیٰ پنجاب اور ہزاروں لوگ اجتماع میں شریک ہوئے۔وزیراعلیٰ، گورنر اور شہریوں نے فیصل چوک میں کشمیری عوام کے ساتھ مکمل یکجہتی کا اظہارکیا۔اجتماع میں شریک لوگوں نے بازوؤں پر سیاہ پٹیاں باندھ کر بھارتی بربریت اور مودی سرکار کے مظالم پر بھرپور احتجاج کیا۔ہزاروں افراد نے پاکستان اور کشمیر کے پرچم اٹھا کر اجتماع میں شرکت کی اورمال روڈ کی فضا ”پاکستان زندہ باد“ اور ”کشمیر بنے گا پاکستان“ کے نعروں سے گونجتی رہی۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے وزیراعلیٰ نے کہا کہ بھارت کے کشمیر یوں کے ساتھ بدترین سلوک کی تاریخ میں مثال نہیں ملتی،قوم نے دنیا کو پیغام دے دیا ہے کہ پاکستان کشمیریوں کے ساتھ ہے۔ پاکستان اور کشمیر ایک تھے، ہیں اور رہیں گے۔ مودی سرکار نے مقبوضہ کشمیر میں بربریت کا بازار گرم کر رکھا ہے۔ انہوں نے کہا کہ انشاء اللہ کامیابی کشمیری عوام کا مقدر بنے گی۔ گور نر پنجاب چودھری محمدسرورنے ”کشمیر میں کر فیو اٹھا“مہم کو پوری دنیا تک لے جانے اور کشمیر میں کر فیو کے خلاف یور پی پار لیمنٹر ین کو خط بھی لکھنے کا اعلان کردیا۔ گور نر پنجاب نے کہا کہ پاکستانی عوام نے ملک بھر میں کشمیریوں کے ساتھ یکجہتی کر کے ان کے ساتھ جینے مرنے کا عہد بھی کیا ہے اور انشاء اللہ پاکستان کا بچہ بچہ کشمیر یوں کی آزادی کیلئے اپنی ہر قر بانی دینے کو تیار ہے اور وہ وقت دور نہیں جب بھارت کے مظالم کا خاتمہ ہوگا اور کشمیر بنے گا پاکستان۔

عثمان بزدار/چودھری سرور

مزید :

صفحہ اول -