حکومت 30منٹ کے احتجاج کی بجائے دوٹوک کشمیر پالیسی بنا ئے

حکومت 30منٹ کے احتجاج کی بجائے دوٹوک کشمیر پالیسی بنا ئے

  

جماعت اسلامی کے مرکزی رہنما لیاقت بلوچ نے ایشو آف دی ڈے میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت ہفتہ میں صرف تیس منٹ کے احتجاج پر ہی انحصار نہ کرے بلکہ حکومت دوٹوک قومی اتفاق رائے کے ساتھ کشمیر پالیسی کو بنا ئے۔انہوں نے کہا کہ پاکستانی حکمران ہندوستان کے اکھنڈ بھارت کے نعرے کو بھی سنیں اور اس کے خلاف کوئی موثر منصوبہ بندی کی فوری پالیسی تشکیل دیں نریندر مودی کے یکطرفہ اقدام نے مسئلہ کشمیر کے حل کیلئے نئے امکانات پیدا کردیئے ہیں اور ہندوستان مستقبل کے نئے خطرات سے دوچار ہوچکا ہے۔انہوں نے کہا کہ جماعت اسلا می یکجہتی کشمیر کیلئے اپنی سطح پر عوامی بیداری اور مستحکم رائے عامہ کیلئے جاری جدوجہد کو مزید تیز کرے گی اور ہم کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کے لئے مارچ کا سلسلہ جاری رکھیں گے۔

لیاقت بلوچ

مزید :

صفحہ اول -