پنجاب بھر میں ضلع کی سطح پر یونیورسٹیاں قائم کرنیکا منصوبہ

  پنجاب بھر میں ضلع کی سطح پر یونیورسٹیاں قائم کرنیکا منصوبہ

  

راجن پور(ڈسٹرکٹ رپورٹر)پنجاب کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کی چیئرپرسن مسرت جمشید اقبال چیمہ نے کہا ہے کہ وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان خان بزدار جنوبی پنجاب بالخصوص ڈیرہ غازی خان ڈویثر ن کی ترقی میں ذاتی دلچسپی رکھتے ہیں۔ صحت انصاف کارڈ پروگرام کا آغاز ضلع راجن پور سے کرنا ان کی اس خطہ سے گہری محبت کو ظاہر کرتا ہے۔ علاقہ پچادھ میں مرنج ڈیم کی تعمیر اور رودکوہیوں کے زرخیز(بقیہ نمبر31صفحہ12پر)

پانی کو کنٹرول کرکے کاشتکاری کے لئے قابل استعمال بنانے سمیت کئی ترقیاتی منصوبوں پر کام ترجیحی بنیادوں پر ہو رہا ہے۔یہ بات انہوں نے ڈپٹی کمشنر آفس میں ڈپٹی کمشنر راجن پور محمد افضل ناصر خان سے غیر رسمی ملاقات کرنے کے بعد سرکاری میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہی۔ملاقات میں اسسٹنٹ کمشنر جامپور سیف الرحمان بلوانی، اسسٹنٹ کمشنر راجنپور مراد حسین، ڈسٹرکٹ انفارمیشن آفیسر محمد اسداللہ شہزاد، اسسٹنٹ ڈائریکٹر لوکل گورنمنٹ یعقوب شیروانی،پرسنل اسٹاف آفیسر ٹو ڈپٹی کمشنر عبدالرحمان لاکھا اور پی ٹی وی کے محمد حسین فریدی موجود تھے۔قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کی چیئرپرسن نے ضلع راجن پور میں جاری ترقیاتی منصوبوں بارے نہایت مسرت کا اظہار کیا اور ڈپٹی کمشنر راجن پور محمد افضل ناصر خان اور ان کی ٹیم کی کارکردگی کو بے حد خراج تحسین پیش کیا۔ چیئرپرسن قائمہ کمیٹی برائے داخلہ پنجاب نصرت جمشید اقبال چیمہ نے ڈسٹرکٹ جیل کا دورہ کیا۔ میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ پاکستان کو سرسبز اور صاف بنانے کا جو ویژن وزیراعظم پاکستان عمران خان نے دیا ہے،وزیراعلی پنجاب سردار عثمان خان بزدار اس کی کی تکمیل میں عملی تفسیر بنے ہوئے ہیں۔ ملکی تاریخ میں پہلی بار وزیراعلی پنجاب سردار عثمان خان بزدار کی خصوصی ہدایات پر ان قیدیوں کو رہائی ملی ہے جو معمولی جرمانہ بھی ادا کرنے سے قاصر تھے اور ہر عید پر وزیراعلی نے اپنا دن قیدیوں کے ساتھ ہی گزارہ ہے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ وسائل کا رخ جنوبی پنجاب کی طرف موڑ دیا گیا ہے جس کی عملی مثال حالیہ بجٹ میں 35فیصد بجٹ کا جنوبی پنجاب کے لیے مختص ہونا ہے۔مستقبل قریب میں میں وزیر اعلی پنجاب کی قیادت میں میں ضلع کی سطح پر یونیورسٹیاں قائم کرنے کا منصوبہ پر کام ہنگامی بنیادوں پر جاری ہے۔ وزیراعلی پنجاب گڈ گورننس کے بارے میں میں زیرو ٹالرنس پالیسی پر عمل پیرا ہے ہے اور کرپشن کا خاتمہ ان کی اولین ترجیح ہے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ جیل ملازمین کے سکیل محکمہ پولیس کے برابر کرنے کے لیے پالیسی تیار کرلی گئی ہے ہے جس پر عمل درآمد آئندہ چند دن میں ہو جائے گا۔پنجاب کے دیگر ملازمین کی طرح جیل ملازمین کو بھی بھی صحت انصاف کارڈ فراہم کیے جائیں گے گے اور جیل میں آر اوپلانٹس کی تنصیب کا کام ہنگامی طور پر کیا جائے گا۔ قبل ازیں ان کی ڈسڑکٹ جیل آمد پر پولیس کے چاک و چوبند دستے نے سلامی دی اور ڈسٹرکٹ جیل سپرنٹنڈنٹ عبدالصبور سکھیرا نے ان کا استقبال کیا۔ اور جیل ملازمین کے مسائل اور قیدیوں کو فراہم کردہ سہولیات بارے تفصیلات چیئرپرسن کو بتائیں۔ جیل کے دورہ کے دوران انہوں نے شجرکاری مہم کے تحت پودا لگایا۔ انہوں نے نے ڈسٹرکٹ فاریسٹ آفیسر کو ہدایت کی کہ ڈسٹرکٹ جیل راجن پور میں 15 ہزار پودے لگائے جائیں اور اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ زیادہ سے زیادہ پھل دار اور مقامی زمین اور آب و ہوا سے مطابقت رکھنے والے پودے اور درخت لگائے جائیں کیونکہ درختوں سے سے مستفید ہونے کا حق ملازمین اور قیدیوں کو اتنا ہی حاصل ہے جتنا کے باقی لوگوں کو۔مسرت جمشیداقبال چیمہ نے جیل میں خواتین اور کم سن قیدیوں سے فراہم کردہ سہولیات بارے استفسار کیا۔ دورہ کے دوران وہاڑی کی رہائشی قیدی خاتون کی شکایت پر ایکشن لیتے ہوئے سپرنٹنڈنٹ جیل کو ہدایت کی کہ فوری طور پر خاتون قیدی کے رشتہ داروں کو تلاش کیا جائے اور خاتون کی ضمانت کے لئے اقدامات کر کے رپورٹ پیش کی جائے۔

منصوبہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -