بہاولنگر: ڈسٹرکٹ ہسپتال میں ڈاکٹر‘ عملہ کی لاپروائی سے بچہ جاں بحق

  بہاولنگر: ڈسٹرکٹ ہسپتال میں ڈاکٹر‘ عملہ کی لاپروائی سے بچہ جاں بحق

  

بہاولنگر(نمائندہ خصوصی) ڈسٹرکٹ ہسپتال میں ڈاکٹر اور عملہ کی غفلت سے مبینہ طور پر ایک سالہ بچہ جاں بحق ہوگیا،عبداللہ کو طبیعت خراب ہونے کے باوجود عملہ موبائل فون استعمال کرتا رہا،ورثانے کا عملے کی بدتمیزی غفلت و لاپروائی پر شدید احتجاج گیا ہے۔،تفصیل کے مطابق ڈسٹرکٹ ہسپتال (بقیہ نمبر33صفحہ12پر)

بہاولنگر کے ائمرجنسی وارڈمیں ڈاکٹر اورعملہ کی مبینہ غفلت کے باعث ایک سال کا بچہ جاں بحق ہوگیا۔ورثاء ڈاکٹر اور عملہ کی منت سماجت کرتے رہے مگر کسی نے توجہ نہ دی۔بچے نے تڑپتڑپ کا اپنی جان دے دی۔جاں بحق ہونے بچے عبداللہ شہزادکے ورثاء نے ائمرجنسی کے باہر احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ بچے کی حالت بگڑنے پر اسے دیکھنے کی بجائے نرس موبائل پر مصروف رہی،منت سماجت کے باوجود نرس نے بچے پر توجہ نہیں دی، نرس اور دیگر عملہ موبائل پر مصروف تھا ان کی غفلت کی وجہ سے عبداللہ جاں بحق ہوا۔افسوسناک امریہ ہے کہ نرس اور عملہ کی جانب سے مریضوں کو دیکھ بھال کے بجائے لواحقین کے ساتھ بدتمیزی کی جاتی ہے انہوں نے اعلی حکام سے مذکورہ عملہ کے خلاف کاروائی کا مطالبہ کیا ہے۔ اس حوالے سے ڈائریکٹر ایمر جنسی ڈاکٹر عامر بٹ نے مریض کے لواحقین سے عملہ کی بدتمیزی کی شکایت پر انکوائری کرنے کا عندیہ دیا ہے اور انکوائری میں غیر اخلاقی رویہ کے مرتکب عملہ کے خلاف کاروائی کی جائے گی۔

جاں بحق

مزید :

ملتان صفحہ آخر -