حادثات میں خاتون سمیت3افراد جاں بحق‘ 47شدید زخمی

حادثات میں خاتون سمیت3افراد جاں بحق‘ 47شدید زخمی

  

ملتان، ڈیرہ، کوٹ ادو، ٹھٹھہ صادق آباد، رحیم یار خان(وقائع نگار،نمائندہ خصوصی، سٹی رپورٹر،تحصیل رپورٹر،نمائندہ پاکستان)حادثات میں خاتون سمیت 3افراد جاں بحق اور47زخمی ہوگئے جبکہ خاتون کے پٹرول چھڑک کر اقدام خودسوزی پر پولیس نے مقدمہ درج کر لیا۔ تفصیل کے مطابق انڈس ہائی وے نور والا علاقہ تھانہ کوٹ چھٹہ کے مقام پر صبح سویرے براستہ ڈیرہ پشاور سے کراچی جانے والی (بقیہ نمبر10صفحہ12پر)

تیز رفتار کوچ اور ٹرک کے درمیان تھانہ کوٹ چھٹہ کی حدود عالی والا کے نزدیک نور والا کے مقام پر خوفناک حادثہ رونما ھوا جس کے نتیجہ میں ایک نامعلوم شخص موقع پر ہی جاں بحق ہوگیا جبکہ دو خواتین سمیت گیارہ مسافر محمد یونس، حسن،محمد رمضان، کامران، سعد اختر، شہباز، خضر عباس، مرید حسین، رمضاں احمد، حور کنول،اور عمیزا بی بی شدید زخمی ھوگئے حادثہ کی اطلاع ملتے ہی ڈی پی او اسد سرفراز خود بھی پولیس نفری کے ہمراہ موقع پر پہنچ گئے جہاں پر ڈیرہ غازیخان پولیس کے جوانوں نے امدادی سرگرمیاں شروع کر کے زخمیوں کو جوس اور ٹھنڈا پانی پلایا اور ریسکیو کے ہمراہ انہیں ٹیچنگ ہسپتال ڈیرہ کے ٹراما سنٹرمنتقل کیا جبکہ دیگر مسافروں، بچوں اور عورتوں کو سرکاری گاڑیوں پر عزت و احترام سے بس اسٹینڈ پر لا کر مختلف بسوں میں بیٹھا کے بغیر کرایہ کے منزل مقصود پرروانہ کیابعد ازاں مشیر صحت حنیف پتافی نے ٹیچنگ ہسپتال کا دورہ کیا اور کوٹ چھٹہ بس حادثہ میں زخمی ہونے والوں کی عیادت کی ایم ایس ٹیچنگ ہسپتال شاہد مگسی کی جانب سے مشیر صحت کو بریفنگ دی گئی اس موقع پر مشیر صحت نے تمام زخمیوں کوبہتریں طبی سہولیات فراہم کرنے کی ہدایت کی جبکہ ڈپٹی کمشنر وقاص رشید نے بس حادثہ کے زخمیوں کی آمد کی اطلاع پر ٹیچنگ ہسپتال کا دورہ کیازخمیوں کی عیادت اور فراہم طبی سہولیات کا جائزہ لیاڈپٹی کمشنر نے سپیشلسٹ کو ٹراما سنٹر طلب کرلیا اورڈاکٹرز کو بہترین طبی سہولیات کی فراہمی کی ہدایات جاری کیں اس موقع پر ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ دو شدید زخمیوں کو سرکاری خرچ پر نشتر ہسپتال ملتان میں منتقل کیا جائے اورزیر علاج زخمیوں کو بہترین علاج معالجہ کی سہولیات فراہم کی جائیں۔ تھانہ محمود کوٹ کے علاقہ میں ٹرک نمبر 22 35 جوکہ شوگرمل سے ملتان کے لیے چینی لوڈ کرکے جا رہا تھا کہ رات ایک بجے کے قریب سیم نالہ کے قریب سڑک کنارے پیدل جانے والے نامعلوم 35 سالہ شخص پر چڑھ دوڑا جس پر نامعلوم موقع پر ہی جاں بحق ہوگیا، ڈرائیور آصف باجوہ ٹرک موقع پر چھوڑ کر فرار ہوگیا، پولیس محمود کو ٹ نے ٹرک قبضہ میں لے کر ڈرائیور کے خلاف مقدمہ درج کرلیا۔ٹھٹھہ صادق آباد کے نواحی اڈااسلام پور ملتان دنیا پور روڈ کے قریب کہروڑ پکاکی ہائی ایس ویگن،مزدہ ٹرک کے مابین سپیڈوبس کی کراسنگ کے دوران تصادم ہوگیا جس کے نتیجہ میں ہائی ایس ویگن ڈرائیور،سواریوں،خواتین بچوں سمیت 16افرادزخمی ہوگئے،اطلاع ملنے پر ریسکیو1122کی امدادی ٹمیں موقع پر پہنچ گئیں،زخمیوں کو طبی امداد دیکر نشتر ہسپتال ملتان منتقل کردیا گیا،ایک خاتون زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جاں بحق ہوگئی،جس کی شناخت نہ ہوسکی ہے،جبکہ دیگر زخمیوں میں ہائی ایس ویگن کے ڈرائیور کی ٹانگیں ٹوٹ گئیں،بچوں خواتین کو شدید چوٹیں آئیں،حادثہ میں ہائی ایس مکمل تبادہ ہوگئی۔عثمان پارک کی رہائشی شمائلہ ندیم نے پولیس کواپنی شکایت میں بیان کیا کہ اس کی ہمشیرہ 32سالہ عامرہ نسیم جسے ایک سال قبل طلاق ہوگئی تھی جس کی وجہ وہ اپنے اہل خانہ کوبتاتی تھی جس پر دلبرداشتہ ہوکر عامرہ نسیم نے خود پر پیٹرول چھڑک کرآگ لگاکرخودکشی کی کوشش، جھلس جانے پر شدید زخمی، ہسپتال منتقل، ہمشیرہ شمائلہ ندیم کی رپورٹ پر پولیس نے اقدام خودکشی کامقدمہ درج کرکے کارروائی شروع کردی۔مسافروں سے بھری تیزرفتار ہائی ایس ویگن اور ٹرالر کے درمیان تصادم سے 20 افراد زخمی ہوگئے،جن کو فوری طور پر نشتر ہسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔ ریسکیو ذرائع کے مطابق تصادم ملتان کے علاقے پرانا دنیا پور روڈ اسلام پورہ سٹاپ پر تیز رفتار ہائی ایس ویگن اور ٹرالر کے درمیان ہوا جس کے نتیجے میں 35سالہ ذرینہ،80سالہ الماس، 30سالہ ساجد، 6سالہ عالیہ،22سالہ عابدہ پروین،35سالہ صغراں، 39سالہ عبدالمجید،5سالہ سلمان، 3سالہ آمنہ،ڈیڑھ سالہ فرحان،65سالہ صغراں بی بی، 45سالہ شمو، 35سالہ الطاف، 40سالہ شہناز، 70سالہ فدا، 50سالہ شعبان، 35سالہ حفیظ، 9سالہ نمرہ، 35سالہ رفیقہ اور 55سالہ زخمی ہوگئے جنہیں ریسکیو ٹیموں نے موقع پر پہنچ کر ابتدائی طبی امداد کے بعد نشتر ایمرجنسی منتقل کردیا جہاں وہ زیر علاج ہیں۔

حادثات

مزید :

ملتان صفحہ آخر -