کشمیر کے نہتے مسلمان 70 سال سے آزادی کی جنگ لڑرہے ہیں

کشمیر کے نہتے مسلمان 70 سال سے آزادی کی جنگ لڑرہے ہیں

  

رستم(نمائندہ پاکستان) وزیر اعظم عمرا ن خان کے کال پر ملک کے دیگر حصو ں کی طرح تحصیل رستم میں بھی کشمیر کے نہتے مسلمانوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کے طور تمام سرکار ی، غیر سرکاری اداروں اور کاروباری لوگوں کی ریلی نکالی گئی، محکمہ تعلیم کی مین ریلی گورنمنٹ ہائی سکول رستم سے نکالی گئی جس میں ہائی سکول مالا ڈھیری، ہائی سکول سرخابی، ہائی سکول برینگن،گورنمنٹ مڈل سکول ملندری، مڈل سکول بازار اور تمام گورنمنٹ پرائمری سکولوں کے طلباء اور اساتذہ نے شرکت، ریلی کے شرکاء نے مختلف بینرز اور پلے کارڈ اٹھائیں تھے جس پر بھارت کا کشمیریو ں پر مظالم کے خلاف نعرے درج تھے، ریلی مین بازار رستم سے گزرتے ہوئے رستم مین چوک میں جلسے کی شکل اختیار کر گئی جس سے خطاب کرتے ہوئے گورنمنٹ ہائی سکول رستم کے پرنسپل اشفاق رضا نے کہا کہ کشمیر کے نہتے مسلمان ستر سالوں سے اپنی آزادی کی جنگ لڑھ رہی ہے ہم کشمیریوں کو یقین دلا رہے ہے کہ پاکستانی قوم اور تمام امت مسلمہ ہر فورم پر کشمیر کے ساتھ کھڑی ہے اور رہے گی آزادی کی اس جنگ میں ہم کشمیر کے ساتھ اخلاقی، سیاسی اورڈپلومیٹک سفارتی پلیٹ فارم پر لڑینگے آج ہم بھارت کو بتانا چاہتے ہیں کہ کشمیر کے نہتے مسلمان اکیلے نہیں ہے ان پر اپنے مظالم بند کرے انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کے قراداد کی روشنی میں کشمیر میں ریفرینڈم کرایا جائے کہ وہ کس کے ساتھ رہنا چاہتے ہیں اور بھارت نے کشمیر کی اپنی حیثیت ختم کر دی اسے واپس لے کر برقرار رکھا جائے کیونکہ کشمیر پاکستان کا حصہ تھا،ہے اور رہے گا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -