”پاکستانیو فکر نہ کرو، اسی آپ ’چھترو پولی‘ ہون لگے آں“ ناراض بھارتی پنجابی نے مودی سرکاری کی ’بینڈ‘ بجا دی، وہ کچھ کہہ دیا کہ مودی کو منہ چھپانے کی جگہ نہ ملے

”پاکستانیو فکر نہ کرو، اسی آپ ’چھترو پولی‘ ہون لگے آں“ ناراض بھارتی پنجابی ...
”پاکستانیو فکر نہ کرو، اسی آپ ’چھترو پولی‘ ہون لگے آں“ ناراض بھارتی پنجابی نے مودی سرکاری کی ’بینڈ‘ بجا دی، وہ کچھ کہہ دیا کہ مودی کو منہ چھپانے کی جگہ نہ ملے

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارتی فوج کے مقبوضہ کشمیر میں مظالم پر ناصرف پوری دنیا بھارت پر تنقید کر رہی ہے بلکہ ان کے اپنے شہری بھی کھل کر سامنے آ گئے ہیں جن کا کہنا ہے کہ کسی ملک کو ہم پر چڑھنے کی کوئی ضرورت نہیں کیونکہ ہم خانہ جنگی کی طرف بڑھ رہے ہیں اور جلد ہی آپس میں ’چھترو پولی‘ ہونے والے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق بھارت سے ناراض ایک بھارتی پنجاب شہری نے اپنے ویڈیو پیغام میں کہا ہے کہ پچھلے دنوں راہول گاندھی اور اپوزیشن کے دیگر رہنماﺅں کیساتھ مقبوضہ کشمیر گئے کیونکہ وہاں کے گورنر نے انہیں دعوت دی تھی اور کہا تھا کہ یہاں آ کر خود حالات دیکھ لیں کہ سب کچھ ٹھیک ہے لیکن وہ جب وہاں گئے تو سری نگر ائیرپورٹ سے باہر ہی نہیں نکلنے دیا جبکہ گورنر صاحب کا کہنا تھا کہ میری دعوت اتنے لمبے عرصے کیلئے نہیں تھی بلکہ اس وقت ردعمل دینا چاہئے تھا۔

بھارتی شہری نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کے موجودہ گورنر کا ریکا رڈ بہت گندہ ہے جو خون کا پیاسا ہے، اس نے جھوٹے نکسل باغی بنا کر ان سے سرینڈر کروایا اور پھر ان سے پیسے لے کر سرکاری نوکریاں دلوائیں جبکہ جن لوگوں کے پاس پیسے نہیں تھے انہیں بھگوڑا قرار دے کر مروا دیا تو ایسے شخص سے کیا توقع کی جا سکتی ہے۔ ان دنوں کشمیریوں کا خون ویسے ہی بہت مہنگا بکے گا کیونکہ پانچ ریاستوں میں الیکشن ہونے جا رہے ہیں اور انہیں معلوم ہے کہ الیکشن جیتنے کیلئے کچھ تو کرنا ہے۔

بھارتی شہری کا کہنا ہے کہ کچھ لوگ متحدہ عرب امارات (یو اے ای) اور سعودی عرب والوں پر غصہ کرتے ہیں کہ وہ مودی کو بہت عزت دے رہے ہیں تو ان پر غصہ مت کریں کیونکہ وہ پیسے اور عورتوں کے رسیا ہیں اور عورتیں پیش کرنے میں ہندوستانی ایک نمبر ہیں، وہ بے چارے شروع سے ایسی چیزوں کے شکار رہے ہیں اور یہ ہندوستان وہاں عورتیں بھیجتے رہتے ہیں۔

بھارتی شہری نے کہا کہ کشمیریوں کیساتھ جو سلوک روا رکھا جا رہا ہے وہ ہندوستان زندہ باد نہیں کہیں گے بلکہ پچھواڑے پر لات ماریں گے۔ جب بھی وہاں سے کرفیو ختم ہو گا تو دیکھنا کیا بنتا ہے، کتنی دیر تک کرفیو لگائیں گے؟ چھ مہینے، سال، دس سالوں تک؟ آپ لگائیں کرفیو لیکن ایسے بات نہیں بنے گی۔ میں ہمسایہ ممالک بالخصوص پاکستان سے یہ بات کہتا ہوں کہ آپ فکر نہ کریں کیونکہ ہم خانہ جنگی کی طرف جا رہے ہیں، کسی کو ہمارے ملک پر چڑھنے کی ضرورت نہیں کیونکہ آپ دیکھیں کہ ایک سے دو سال میں ہم نے خود ہی ’چھترو پولی‘ ہو جانا ہے۔

اس ملک میں کمیونٹی کو عزت ہی نہیں دی جا رہی، مسلمانوں، عیسائیوں، سکھوں اور دلتوں کا جینا حرام کر رکھا ہے، یہ دوبے، شری واستو شرمے اور ورمے سب لوگوں کو دبا کر نہیں رکھ سکتے، ہندوستان کا بیڑہ ڈبونے کیلئے مودی اور اجیت دوول جیسے اوتار آ گئے ہیں اور یہ سارا بندوبست کر کے آئے ہیں، آگے آگے دیکھیں ہوتا ہے کیا۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -بین الاقوامی -