اشیاء ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ کیخلاف قرارداد اسمبلی میں 

اشیاء ضروریہ کی قیمتوں میں اضافہ کیخلاف قرارداد اسمبلی میں 

  

لاہور(نمائندہ خصوصی)تین سالوں میں اشیاء کی قیمتوں میں سو فیصد سے زائد اضافے کیخلاف پنجاب اسمبلی میں قرارداد جمع،قرارداد مسلم لیگ(ن) کی رکن سمیرا کومل کی جانب سے جمع کرائی گئی۔پنجاب میں تین سالوں کے دوران مہنگائی سو فیصد بڑھ گئی ہے۔چینی،گھی،دالیں،سبزیاں سب کی قیمتیں ڈبل سے زیادہ ہو گئی ہیں۔

 274یونین کونسلوں میں اشیائے ضروریہ کی 1 لاکھ 48 ہزار دکانوں کی چیکنگ کیلئے صرف 53 پرائس کنٹرول مجسٹریٹس ہیں جن کیلئے اتنی دکانوں کا معائنہ ناممکن ہے۔ضلعی انتظامیہ نے 2ماہ قبل محکمہ داخلہ سے 250مجسٹریٹس لگانے کی اجازت مانگی مگر تاحال 53مجسٹریٹس پر گزاراکرنے کے احکامات ملے۔ شہر میں 10ہزار تنوروں اور400سو میگا سٹورز کی مانیٹرنگ بھی نہ ہونے کے برابر ہے۔ آٹا 57، چینی 88روپے کے بجائے 110روپے کلو فروخت ہو رہی ہے،2 ہفتے قبل بیف اور مٹن سرکاری نرخوں میں 50 روپے کلو مہنگے کئے گئے لیکن بازار میں 100 سے 300 روپے تک زائد وصول کئے جا رہے ہیں۔یہ ایوان مطالبہ کرتا ہے کہ پرائس کنٹرول مجسٹریٹس کی تعداد بڑھائی جائے۔شہریوں کو ریلیف کی فراہمی یقینی بنائی جائے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -