پشاور،گورنمنٹ انجینئرز ایسوسی ایشن کا مطالبات کے حل کیلئے احتجاجی مظاہرہ

  پشاور،گورنمنٹ انجینئرز ایسوسی ایشن کا مطالبات کے حل کیلئے احتجاجی مظاہرہ

  

پشاور(سٹی رپورٹر)خیبر پختونخوا ایسوسی ایشن آف گورنمنٹ انجیئنرز (KPAGE) نے اپنے مطالبات کے حق میں پشاور پریس کلب کے سامنے احتجاجی کیمپ لگا لیا ہے کیمپ میں کثیر تعداد میں انجنیئرز نے شرکت کی مظاہرین نے ہاتھوں میں پلے کارڈز اور بینرز اٹھا رکھے تھے جس پر انکے حق میں مطالبات درج تھے اس موقع پر شرکاء کا کہنا تھا کہ پچھلے دو ہفتوں سے ہڑتال پر ہے لیکن کوئی شنوائی نہیں ہو رہی انہوں کہا کہ بی ٹیک ٹیکنیشن کے خلاف نہیں بلکہ اُن کیلئے نرسوں کی طرز پر علیحدہ کیڈر ز کی حمایت کرتے ہیں۔پیک کے قانون کے مطابق کسی بھی پروفیشنل آسامی اور تعیناتی کیلئے پیک کے ساتھ انجنیئرز کے طور پر رجسٹرڈ ہونا ضروری ہے،محکمہ آبپاشی میں کیے جانے والا حالیہ اقدام اس قانون کی صریحاً خلاف ورزی  ہے پیک کا قانون وفاقی اسمبلی سے منظور شدہ ہے جسکا کا اطلاق پاکستان کے وفاقی اور تمام صوبائی محکموں پر ہونے باوجود  اس کی حقیقی معنوں میں عمل داری نہیں کی گئی  انہوں نے مطالبہ کیا کہ پاکستان انجنیئرنگ کونسل 1976کے قانون کی پوری عمل داری کی جائے۔شرکاء نے  کہا کہ انسٹیٹوٹ آف انجیئرنگ آف پاکستان،انجنیئرز  کی وفاقی ایسوی سی ایشن اور پنجاب انجنیئرز ایسو سی ایشن نے بھی خیبر پختونخوا کے انجنیئرز کی حمایت کا اعلان کیا ہے اور انہوں نے واضح کیا ہے کہ پیک ایکٹ کی عمل داری کو یقینی بنایا جائے بصورت دیگر احتجاج کو پورے پاکستان میں پھیلایا جائے گا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -