وزیراعظم کے تجویز کردہ نام مسترد، اپوزیشن لیڈر کا مشاورت کا آغاز

  وزیراعظم کے تجویز کردہ نام مسترد، اپوزیشن لیڈر کا مشاورت کا آغاز

  

 کراچی (این این آئی) اپوزیشن لیڈرشہبازشریف نے وزیراعظم عمران خان کے تجویزکردہ نام مسترد کردئیے۔تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن کے ارکان کی تعیناتی کے معاملے میں وزیر اعظم عمران خان کی جانب سے لکھے گئے خط میں تجویز کردہ نام اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے مسترد کردیے ہیں۔ذرائع کے مطابق شہباز شریف نے عمران خان کوجوابی خط لکھنے کا فیصلہ کیا ہے، اپوزیشن لیڈررواں ہفتے جوابی خط میں الیکشن کمیشن کے ممبرپنجاب اورخیبرپختونخواکیلئے تین تین تجویزکریں گے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ شہباز شریف پیپلز پارٹی، جے یو آئی، اے این پی سمیت دیگر جماعتوں کا مشاورت کریں گے۔دوسری جانب مسلم لیگ (ن)نے آئندہ عام انتخابات میں الیکٹرونک ووٹنگ کے استعمال کے معاملے پر وزیراعظم کے خط پر مشاورت کا آغاز کر دیا ہے،تاہم حتمی فیصلہ پارٹی قائد کریں گے۔تفصیلات کے مطابق آئندہ عام انتخابات میں الیکٹرونک ووٹنگ کے استعمال کے معاملے پر وزیراعظم کی جانب سے خط اپوزیشن لیڈرشہبازشریف کوموصول ہوگیا، ذرائع ن لیگ نے خط موصول ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ وزیر اعظم نے خط میں الیکٹرانک ووٹنگ پرمشاورت کیلئے ن لیگ سے نام مانگے ہیں، جس پر ن لیگ نے مشاورت کا آغاز کر دیا ہے۔ذرائع کے مطابق الیکٹرانک ووٹنگ میں نام دینے کا حتمی فیصلہ پارٹی قائد کریں گے، فیصلے کے بعد شاہدخاقان،احسن اقبال اور رانا ثنااللہ کے نام بھجوائے جانے کا امکان ہے۔ذرائع کے مطابق لیگی رہنماؤں نے ای وی ایم پر بات چیت کیلئے الیکشن کمیشن سے مشاورت کا مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ ای وی ایم پربات چیت میں الیکشن کمیشن کے لوگ بھی بیٹھیں، الیکشن کمیشن کے لوگوں کی بھی ای وی ایم پر رائے لی جائے۔اپوزیشن لیڈر شہبازشریف نے وزیراعظم کے خط پر دیگراپوزیشن جماعتوں سے مشاورت کا فیصلہ کرلیا ہے، ذرائع ن لیگ کا کہنا ہے کہ ای وی ایم سے متعلق وزیراعظم کے خط کا جواب مشاورت کے بعد ہوگا۔

الیکشن کمیشن 

مزید :

صفحہ اول -