بجلی بلوں میں ”کرنٹ“ غریبوں کی چیخیں، متعدد کو سکتہ

بجلی بلوں میں ”کرنٹ“ غریبوں کی چیخیں، متعدد کو سکتہ

  

کوٹ ادو(تحصیل رپورٹر)  عوام کو ریلیف دینے کے دعوے کرنیوالی ریاست مدینہ کی دعویدار حکومت نے عوام کا جینا دوبھر کردیا ہے،بجلی کی لوڈ شیڈنگ کے باوجود عوام (بقیہ نمبر30صفحہ6پر)

کو ماہ اگست کے بھاری بھرکم بجلی کے بل ارسال کردیے جس سے غربت مہنگائی کی ماری عوام کی چیخیں نکل گئی ہیں،بھاری بلوں سے نہ صرف دیہاڑی دار مزدور طبقہ بلکہ تاجر سفید پوش طبقہ کمرشل وگھریلو صارفین بھی بے حد پریشان ہیں،اس حوالے سے شہریوں طلحہ رحمانی،نوشاد ہاشمی،ریاض احمد،منیر احمد،یاسر چوہدری،قاضی ذیشان،علی حمزہ،طاہر پرنس ودیگرنے کہا کہ اس حکومت نے جہاں ہر چیز مہنگی کی ہے وہاں بجلی کے ریٹوں میں بے پناہ اضافہ کرکے عوام پر ظلم کے پہاڑ توڑ دیے ہیں، اوپر سے واپڈا نے ماہانہ ریڈنگ کا دورانیہ 30دن کی بجائے 40دن تک بڑھا رہا ہے جسکی وجہ سے زیادہ یونٹ چلنے سے بجلی کے فی یونٹ ریٹ میں اضافہ ہوجاتا ہے،شہریوں کا کہنا تھا کہ جب پرانے گراری والے میٹر نصب تھے جن سے شہریوں کو صرف استعمال شدہ یونٹوں کا بل آتا تھا، واپڈا انتظامیہ نے سوچی سمجھی سکیم کے تحت گراری والے میٹر اتار کر انتہائی تیز رفتار ڈیجیٹل میٹر نصب کر دیئے ہیں جو کہ صارفین کے لئے وبال جان بنے ہوئے ہیں، موجودہ دور میں مہنگائی کا جن پہلے ہی قابو نہیں آرہا اور روزبروز بجلی کے نرخوں میں اضافہ کے ساتھ ساتھ نصب ہونے والے نئے تیز رفتار ڈیجیٹل میٹروں نے بھی یونٹس گرانے میں کسی قسم کی کوئی کسر نہیں چھوڑی، صارفین نے مطالبہ کیا کہ حکومت صارفین کو ریلیف فراہم کرنے کے حوالے سے اقدامات اٹھائے تاکہ غریب اور سفید پوش طبقہ سے تعلق رکھنے والے افراد واپڈا کی سہولیات سے مستفید ہو سکیں۔

سکتہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -