ایم پی اے سبین گل کا اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپور کا دورہ، ملاقاتیں 

 ایم پی اے سبین گل کا اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپور کا دورہ، ملاقاتیں 

  

بہاولپور(بیورو رپورٹ، ڈسٹرکٹ رپورٹر) رکن صوبائی اسمبلی اور ترجمان وزیر اعلیٰ پنجاب   سبین گل خان نے کہا ہے کہ اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپور جنوبی پنجاب (بقیہ نمبر52صفحہ6پر)

کا تاریخی اثاثہ ہے۔ یہ یونیورسٹی گزشتہ دو برس سے نہ صرف بہاولپور بلکہ خطے کے ساتھ ساتھ پورے ملک میں علم اور تحقیق کی نئی جدت پھیلا رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپوروائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر اطہر محبوب کی قیادت میں صرف دو سال کے قلیل عرصے میں ہونے والی تبدیلیاں انتہائی خوش آئند ہیں۔ اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپور میں اساتذہ کی تعداد دو گنا ہو گئی ہے اور طلباء کی تعداد میں 40ہزار سے زائد کا اضافہ انتہائی پیش رفت ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ بات انتہائی اہمیت کی حامل ہے کہ اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپور میں تقریبا 40سے 50فیصد طالبات زیر تعلیم ہیں اور اسی طرح فی میل فیکلٹی ممبران اور خواتین افسران کی ایک بڑی تعداد کام کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم پاکستان کے حالیہ دورے میں وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر اطہر محبوب کی صلاحیتوں کا اعتراف اور ان کی یونیورسٹی کی خدمات پر سراہنا انتہائی قابل فخر بات ہے اور اس علاقے کے تمام لوگوں کے لیے یہ ایک خوش آئند امر ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت اعلیٰ تعلیم اور تعلیمی شعبے کی ترقی کے لیے ہر ممکن امداد فراہم کر رہی ہے اور اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپور کے لیے حکومت کی جانب سے 4ارب روپے کی گرانٹ جس میں احمد پور شرقیہ کیمپس اور انسٹی ٹیوٹ آف فزکس اور دیگر جدید شعبہ جات کا قیام شامل ہے جو اس علاقے کی سماجی اور ترقی کے لیے بہترین مثال ہے۔ اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپور میں داخلہ مہم جاری ہے اور اس حوالے سے لوگ جوک در جوک کیمپس آرہے ہیں جو اس یونیورسٹی کے اعلیٰ تعلیمی معیار کا اظہار ہے۔ رکن صوبائی اسمبلی سبین گل خان نے اِن خیالات کا اظہار اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور کے دورے اورڈسٹرکٹ ویمن فورم ملتان کے زیر اہتمام ایک تعارفی سیشن میں خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر پُرو وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر نوید اختر نے اپنے بیان میں اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور کے بارے میں بیان کرتے ہوئے کہا کہ 1975میں حکومت پنجا ب نے اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور کو چارٹرڈ یونیورسٹی قرار دیا اور جس کے بعد یونیورسٹی ترقی کے نئے اُفق چھو رہی ہے۔ یہاں پر اسلامی علوم، فارمیسی، انجینئرنگ، سائنسز، سوشل سائنسز  اور آرٹس میں اعلیٰ تعلیم اور تحقیق جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور میں حال ہی میں انٹر کراپنگ ٹیکنالوجی اور کپاس کے نئے بیج متعارف کروائے ہیں جو یونیورسٹی کی پہچان بن چکے ہیں۔ اس موقع پر رجسٹرار پروفیسر ڈاکٹر معظم جمیل نے خواتین وفد کو اسلامیہ یونیورسٹی بہاول پور اور خاص طور پر عباسیہ کیمپس میں خوش آمدید کہتے ہوئے کہا کہ عباسیہ کیمپس یونیورسٹی کا تاریخی کیمپس ہے جہاں پر یونیورسٹی کے رجسٹرار،کنٹرولر امتحانات، شعبہ قانون اور دو بڑے ہاسٹلز قائم ہیں۔ اس موقع پر ڈین فیکلٹی آف سوشل سائنسز پروفیسر ڈاکٹر روبینہ بھٹی نے بتایا کہ اسلامیہ یونیورسٹی بہاولپور میں خواتین ہر شعبے میں بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کررہی ہیں اور وہ بطورچیئرپرسن وویمن ہراسمنٹ کمیٹی اس یونیورسٹی کو یقینی بنا رہی ہیں کہ خواتین کیلئے ایک محفوظ اور سازگار ماحول میسر ہوجہاں پروہ سکون واطمینان سے اپنے کام سرانجام دیں سکیں۔پروفیسرڈاکٹرراحیلہ خالدقریشی نے کہا کہ فیکلٹی آف اسلامک لرننگ میں گزشتہ کئی برسوں سے برداشت کی اسلامی تعلیمات کے حوالے سے سیمینار منعقد ہوتے ہیں جن میں خواتین،اساتذہ اورطلباء طالبات بڑھ چڑھ کرحصہ لیتے ہیں۔ اس موقع پرپروفیسرڈاکٹریاسمین روفی نے وویمن ڈویلپمنٹ سینٹر کے قیام اور اس کی سرگرمیوں سے متعلق آگاہ کیا۔بعدازاں ملتان سے آئے ہوئے رکن صوبائی اسمبلی کی قیادت میں وفد نے عباسیہ کیمپس کادورہ کیااورتاریخی کیمپس کی تعریف کی۔

جبکہ ممبر صوبائی اسمبلی، ترجمان وزیر اعلیٰ پنجاب و فوکل پرسن ڈسٹرکٹ ویمن پیس فورم ملتان سبین گل خان نے ڈسٹرکٹ ویمن پیس فورم ملتان کے وفد کے ہمراہ ڈپٹی کمشنر بہاول پور عرفان علی کاٹھیا سے ان کے دفتر میں ملاقات کی۔ انہوں نے ڈسٹرکٹ ویمن پیس فورم کی اہمیت و افادیت سے آگاہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ بہاول پور ضلع میں بھی ڈسٹرکٹ ویمن پیس فورم تشکیل دیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اس فورم کی مدد سے معاشرہ میں امن و امان کی فضاء قائم کرنے اور مذہبی رواداری کا شعور اجاگر کیا جائے گا۔ ڈپٹی کمشنر عرفان علی کاٹھیا نے کہا کہ ملک کی ترقی و خوشحالی میں خواتین کا اہم کردارہے۔ ان کی فلاح وبہبودکے لیے تمام وسائل بروئے کار لائے جائیں گے۔

دورہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -