کرونا سے 2ہلاکتیں: چوتھی لہر، ٹیچنگ ہسپتالوں میں دو ہفتوں کیلئے آپریشن معطل 

کرونا سے 2ہلاکتیں: چوتھی لہر، ٹیچنگ ہسپتالوں میں دو ہفتوں کیلئے آپریشن معطل 

  

 ملتان،ڈیرہ غازیخان،میلسی،راجن پور (وقائع نگار،سٹی رپورٹر،نامہ نگار،ڈسٹرکٹ رپورٹر)نشتر ہسپتال ملتان میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران کورونا میں مبتلا ایک اور مریض جاں  بحق ہوگیا۔جس کے بعد  اموات کی مجموعی  تعداد 888 ہو گئی۔ تفصیل کے مطابق(بقیہ نمبر45صفحہ6پر)

 نشتر ہسپتال کے آئی سو لیشن وارڈز میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران کورونا میں مبتلا لیہ کے رہائشی جمشید نے دم توڑ دیا،یوں یکم اپریل 2020  سے 30 اگست  2021 کے درمیان کورونا کے باعث ہونے والی اموات کی مجموعی تعداد 888 ہو گئی  ہے،جبکہ نشتر ہسپتال میں زیر علاج کورونا کہ مریضوں کی تعداد 22 ہو گئی ہے جن میں سے 16 مریضوں کا تعلق ملتان سے ہے,جبکہ کورونا کے شبہ میں 80 مریض زیر علاج ہیں جن کی رپورٹس کا انتظار  ہے،ادھر رواں سال نشتر ہسپتال میں کورونا کے شبہ میں 7ہزار 492 افراد رپورٹ ہوئے جن میں سے 2 ہزار 839 افراد میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے۔ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر جنرل راجن پور زبیراحمد اعجاز کی زیر صدارت کرونا ویکسی نیشن بارے اجلاس منعقد ہوا۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے بس اڈا مالکان اور منیجرز کو ہدایت کی کہ وہ اپنے تمام ملازمین کی ویکسی نیشن کو مکمل کریں۔ علاوہ ازیں کرو نا ویکسی نیٹڈمسافروں کو بس میں سوار ہونے کی اجازت دی جائے۔ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر جنرل نے بس سٹینڈ راجن پور پرکرونا ویکسی نیشن سینٹر قائم کرنے کا بھی حکم دیا۔اسسٹنٹ کمشنر کو بھی ہدایت کی کہ بس سٹینڈ کا روزانہ کی بنیاد پر وزٹ کریں۔میریوسف بلوچ اور فیصل مورز کے منیجر نے بتایا کہ تمام ملازمین کو پہلی ڈوز لگا دی گئی ہے اور انشااللہ بہت جلد دوسری ڈوز بھی لگا دی جائے گی۔محمکہ پرائمری اینڈ سیکنڈری سے دوسرا میسیج نہ مل سکنے کی بنا پر خواتین ومرد 28 دن گذرنے کے باوجود دوسری ڈوز نہ لے سکے۔ تفصیل کے مطابق اکثر افراد میلسی کے کء مرکز سے پہل ڈوذ لے چکے ہیں مگر اس کے بارے میں انہیں بتایا جاتا ہے کہ 28 دنوں بعد دوسری ڈوز کا میسیج آجائے گا جو کء مثالوں میں نہیں آتے پڑھے لکھے افراد خود ہسپتالوں میں رابطہ کر کے میسیج نکلوا لیتے ہیں لیکن ان پڑھ افراد اپنے موبائلز پر ان میسیجز کا انتظار کرتے رہتے ہیں اور یوں وقت پر دوسری ڈوز لینے سے محروم رہتے ہیں جن کی تعداد بڑھتی جارہی ہے جس کہ بنا پر بخار عام ہو رہا ہے عوامی سماجی حلقہ نے پرائمری اینڈ سیکنڈری  ہیلتھ کے تحصیل اور ضلعی حکام سے نوٹس لے کر  فوری موثر اقدامات کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ ٹیچنگ ہسپتال ڈی جی خان کے کرونا وارڈ میں داخل ایک اور مریض جاں بحق،48مریض ہسپتال میں داخل،14نئے کرونا کیسزمثبت،جبکہ28مریضوں میں کرونا کاخدشہ،4 مریضوں کی حالت تشویشناک اور 8 مریض ونٹیلیٹرز پر چلے گئے   ٹیچنگ ہسپتال ڈی جی خان کے فوکل پرسن ڈاکٹر خالد تحسین نے بتایا کہ ٹیچنگ ہسپتال کے کرونا وارڈ میں داخل48 مریضوں میں سے ایک مریض سخی سرور کا رہائشی مٹھو خان جاں بحق ہو گیا،14 نئے مریضوں کے کروناکیسز مثبت جبکہ ہسپتال میں داخل 28 مریضوں میں کرونا کا خدشہ پایا جارہا ہے 4 مریضوں کی حالت انتہائی خطرناک اور 8 مریض ونٹیلیٹرز پر ہیں فوکل پرسن ڈاکٹر خالد تحسین نے کہا کہ کرونا ایک خطرناک وباء ہے حکومتی ایس او پیز پرعمل کرکے اس سے محفوظ رہاجاسکتا ہے شہری حکومتی ایس اوپیز پر عملدرآمد یقینی بنائیں خود بھی محفوظ رہیں اور دوسروں کوبھی محفوظ رکھیں۔ڈپٹی کمشنر ذیشان جاوید نے بوائز سنٹر آف ایکسی لینس اور میڈیکل کالج کے کورونا ویکسی نیشن سنٹر کا دورہ کیا. ایڈیشنل ڈپٹی کمشنرز قیصر عباس رند، احمد حسن رانجھا،اسسٹنٹ کمشنر صدر مہدی ملوف،ڈی ای او سیکنڈری مہر سراج الدین، سی ای او ہیلتھ ڈاکٹر سخاوت علی رندھاوا، پرنسپل حافظ راشد سعید رانا، وائس پرنسپل عباس مہدی اور دیگر ہمراہ تھے. ڈپٹی کمشنر ذیشان جاویدنے سکول اور ویکسی نیشن سنٹر کے معاملات چیک کئے ڈپٹی کمشنر نے میڈیکل کالج کے ویکسی نیشن سنٹر کو سپورٹس کمپلیکس میں منتقل کرنے کی تجویز کے معاملات کا بھی جائزہ لیا. ملک سمیت صوبہ بھر   میں کرونا کے بڑھتے مریضوں کی تازہ صورت حال کا جائزہ لینے کیلئے کرونا مینجمنٹ  کمیٹی کا ایک ہنگامی اجلاس گزشتہ روز نشتر ہسپتال ملتان میں منعقد کیا گیا۔ جس کی صدارت پرنسپل پروفیسر ڈاکٹر افتخار حسین نے کی۔ اجلاس میں  شعبہ میڈیسن،  شعبہ امراض سینہ،  شعبہ انتہائی نگہداشت، شعبہ میڈیکل گیسز   کے سربراہان اور دیگر  انتظامی افسران نے شرکت کی۔اجلاس میں نشتر ہسپتال میں  کرونا مریضوں کے لیے موجود سہولیات کا جائزہ لیا گیا۔ سیریس مریضوں  کی تعداد میں اضافہ کو مدنظر رکھتے ہوئے  وینٹی لیٹرز کی تعداد  میں اضافہ کر دیا گیا ہے اور   11 مزید وینٹی لیٹرز  بڑھانے کے بعد  کل تعداد اب 79 سے بڑھ کر 90 ہو گئی ہے۔   مزید براں پرنسپل  پروفیسر ڈاکٹر افتخار حسین نے   خراب وینٹی لیٹرز کو ہنگامی بنیادوں پر ٹھیک کروانے کے لیے اقدامات کرنے کی ہدایت  کی۔  نشتر ہسپتال میں آکسیجن کی فراہمی کا بھی جائزہ لیا گیا۔ شعبہ گیسز کے انچارج کو ہدایت کی گئی کہ آکسیجن کی ترسیل کے نظام کو ہر لحاظ سے  یقینی بنایا جائے تاکہ ہسپتال میں آکسیجن کی کمی کے نتیجے میں ہونے والی کسی بھی  ایمرجنسی صورتحال سے بچا جاسکے۔ کمیٹی کو بتایا گیا کہ  نشتر ہسپتال میں ادویات اور حفاظتی لباس کی فراہمی میں کسی قسم کی کمی کا سامنا نہیں ہے۔ اسکے علاوہ فیصلہ کیا گیا کہ کرونا کے مرض میں مبتلا سرجری، گائنی اور بچوں کے داخلے کے لیے بھی الگ بیڈز  کو مختص کیا جائے گا تاکہ دیگر مریضوں سے الگ رکھتے ہوئے ان کا علاج کیا جاسکے۔ کمیٹی نے اس بات کا اعادہ کیا کہ نشتر ہسپتال انتظامیہ ہمیشہ کی طرح عوام الناس کو  طبی سہولیات مہیا کرنے کے لیے تمام وسائل کو بروئے کار لاتی رہے گی۔محکمہ سپیشلائزڈ ہیلتھ کیئر اینڈ میڈیکل ایجوکیشن پنجاب نے کورونا وبا کی چوتھی لہر کے پیش نظر نشتر ہسپتال ملتان سمیت صوبہ کے چار ٹیچنگ ہسپتالوں میں الیکٹو سرجری(آپریشن)دو ہفتے کے لئے معطل کردیے ہیں۔میو ہسپتال لاہور،جناح ہسپتال لاہور،جنرل ہسپتال لاہور اور نشتر ہسپتال ملتان میں تمام آپریشن دو ہفتوں کے لے معطل کر دیے گئے ہیں۔ان ہسپتالوں میں مریضوں کے ایمرجنسی آپریشن معمول کے مطابق جاری رہیں گے

مزید :

ملتان صفحہ آخر -