بیلجئن نژاد پاکستانی لڑکی مائرہ ذوالفقار کے قتل کیس میں بڑی پیش رفت سامنے آگئی

بیلجئن نژاد پاکستانی لڑکی مائرہ ذوالفقار کے قتل کیس میں بڑی پیش رفت سامنے ...
بیلجئن نژاد پاکستانی لڑکی مائرہ ذوالفقار کے قتل کیس میں بڑی پیش رفت سامنے آگئی

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن ) صوبائی دارالحکومت کے علاقے ڈیفنس میں قتل ہونے والی بیلجئن نژاد پاکستانی لڑکی مائرہ ذوالفقار کے قتل کیس میں بڑی پیش رفت سامنے آگئی،سیشن کورٹ نے مقدمے میں ملوث ملزم ذیشان جدون کو اشتہاری قرار دیتے ہوئے ظاہر جدون سمیت دیگر گرفتار ملزمان کوفرد جرم کی کارروائی کےلئے سماعت 7 ستمبر کو طلب کر لیا ۔

نجی ٹی وی ہم نیوز کے مطابق مقتولہ مائرہ ذوالفقارکے قتل کا مقدمہ ظاہر جدون اور اسکے بھائی کے خلاف درج ہے اورملزم ذیشان جدون کا بھائی ظاہر جدون اعتراف جرم بھی کرچکا ہے۔ جس میں ملزم نے کہا کہ مقتولہ کے ساتھ جھگڑا ہوا اور3 مئی کی صبح کوقتل کیا۔ مقتولہ کے قتل کا علم اس کی دوست کو تھا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ ظاہر جدون پہلے بھی ایک قتل کے مقدمہ میں ملوث رہ چکا ہے۔

یاد رہے کہ پاکستانی نژاد مائرہ ذوالفقار کو تین مئی 2021 کو لاہور کے علاقے ڈیفنس (فیز 5) میں اس گے گھر میں نامعلوم افراد نے قتل کر دیا تھا، پوسٹ مارٹم رپورٹ کے مطابق انہیں بے دردی سے قتل کیا گیا تھا۔

مزید :

جرم و انصاف -علاقائی -پنجاب -لاہور -