ایجنسیوں سمیت بلوچستان کے حالات خراب کرنے والوں کے خلاف کاروائی ہونی چاہیے:طلال اکبر بگٹی

ایجنسیوں سمیت بلوچستان کے حالات خراب کرنے والوں کے خلاف کاروائی ہونی ...
ایجنسیوں سمیت بلوچستان کے حالات خراب کرنے والوں کے خلاف کاروائی ہونی چاہیے:طلال اکبر بگٹی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)جمہوری وطن پارٹی کے سربراہ طلال اکبر بگٹی نے کہا ہے کہ وہ الیکشن ملتوی کرنے کے حق میں نہیں ہیں۔ اسمبلیوں میں بیٹھے ہوئے غیر جمہوری لوگوں کو انتخابات کے ذریعے شکست دی جائے گی۔ لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ بلوچستان کے حالات ایسے نہیں کہ منصفانہ انتخابات ہوں سکیں تاہم عوام کے حقیقی نمائندوں کو اسمبلیوں میں آنا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ جب ان کے خلاف فرنٹیر کور نے آپریشن کیا تو میاں نواز شریف نے آواز اٹھائی جبکہ بلوچستان کے اراکین پارلیمنٹ کا ضمیر نہ جاگا۔ پرویز مشرف نے نواب اکبر بگٹی اور محترمہ بے نظیر بھٹو کو قتل کرایا مگر افسوس ہے کہ انہیں پورے اعزاز کے ساتھ رخصت کیا گیا۔شاہ زین بگٹی کے استعفی کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ رحمان ملک نے سبز باغ دکھا کر شاہ زین بگٹی کو لانگ مارچ پر آمادہ کیا جبکہ بعد میں ان کے خلاف جھوٹے مقدمات قائم کردیے۔ انہوں نے کہا کہ ایجنسیوں سمیت جو بھی بلوچستان کے حالات خراب کرنے میں ملوث ہے اس کے خلاف کارروائی ہونی چاہیے۔ پرویز مشرف کے قتل پر انعام کی بات پر طلال بگٹی کی مقامی صحافی کے ساتھ دلچسپ نوک جھونک بھی ہوئی۔ تاہم ان کہنا تھا کہ وہ اپنے اعلان پر قائم ہیں۔

مزید : قومی