افغان حکومت پاکستانی تاجروں کو 6ماہ کے ملٹی پل ویزے جاری کریگی

افغان حکومت پاکستانی تاجروں کو 6ماہ کے ملٹی پل ویزے جاری کریگی

کراچی (اکنامک رپورٹر)افغانستان کی حکومت نے پاکستان افغانستان جائنٹ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کی سفارش پر پاکستانی بزنس کمیونٹی کو 6ماہ کے ملٹی پل ویزے جاری کرنے کا اعلان کیا ہے جبکہ افغانستان کے نائب صدر کریم خلیلی نے پی اے جے سی سی آئی پاکستان چیپٹر کے کو چیئرمین محمد زبیر موتی والا کی تجویز پر افغانستان میں پاکستانی ایکسپورٹ پر ڈیوٹی کی شرح میں اضافے ¾ کامن ویلتھ آف انڈیپنڈنٹ سٹیٹس کو ایکسپورٹ پر فی کنٹینر 100ڈالر اور روڈ کے استعمال پر 110 فیصد ڈیوٹی سمیت پاکستانی بزنس کمیونٹی کو درپیش مشکلات اکنامک کمیٹی آف افغانستان کی سطح پر اٹھانے کی یقین دہانی کرائی ہے ۔پاکستان افغانستان جائنٹ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری اور افغانستان انوسٹمنٹ سپورٹ ایجنسی کے مابین دونوں ممالک کے درمیان سرمایہ کاری کے فروغ اور تجارتی روابط کو مزید مستحکم کرنے کے لئے مفاہمتی یادداشت پر دستخط ہوئے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان افغانستان جائنٹ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کا 20رکنی تجارتی وفدپی اے جے سی سی آئی پاکستان چیپٹر کے شریک صدر محمد زبیر موتی والاکی سربراہی میں کابل میں ہونیوالی دوسری سالانہ کانفرنس میں شرکت کے بعد وطن واپس پہنچ گیا ہے ۔ پی اے جے سی سی آئی کا وفد 23 سے 26 دسمبر 2013ءتک افغانستان کے دورہ پر تھا۔ پی اے جے سی سی آئی کے تجارتی وفد نے افغانستان کے نائب صدر کریم خلیل ¾ افغانستان انوسٹمنٹ سپورٹ ایجنسی کے صدر وافی اللہ افتخار ¾ وزیر تجارت محمد شاکر کارگر ¾ نائب وزیر تجارت مزمل شنواری ¾ وزارت خزانہ اور کابل میں پاکستان کے سفیر سمیت افغانستان کی بزنس کمیونٹی سے ملاقات کی ۔

اس موقع پرپی اے جے سی سی آئی کے چیئرمین خان جان الکوزئی ¾ شریک چیئرمین محمد زبیر موتی والا ¾ خیبر پختونخوا چیمبر کے صدر زاہداللہ شنواری ¾ ڈائریکٹر کسٹمز افغانستان گل باچا ¾ سیکرٹری ایف بی آر پاکستان شہلا ذاکر شاہ اور پی اے جے سی سی آئی کے ڈائریکٹرز ضیاءالحق سرحدی ¾ انجینئر دارو خان اور جائنٹ چیمبر کے ڈائریکٹرز سمیت افغانستان اور پاکستان کے کاروباری افراد بھی موجود تھے ۔ پی اے جے سی سی آئی کے شریک چیئرمین زبیر موتی والا نے وطن واپسی پر افغانستان کے دورے کے حوالے سے میڈیا کو تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ ان کا یہ دورہ انتہائی کامیاب رہا اور 80فیصدمسائل حل کرکے اس دورے کے بنیادی مقاصد حاصل کرلئے گئے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ افغانستان کے نائب صدر کریم خلیل کو پاکستانی بزنس کمیونٹی کے مسائل سے آگاہ کیاگیا اور ویزہ کے مسائل ¾ ڈیوٹیز سٹرکچر ز اور افغان ٹرانزٹ ٹریڈ اور پاکستانی ایکسپورٹ سے متعلق مسائل سے آگاہ کیاگیا ۔ انہوں نے بتایا کہ افغان نائب صدر کو ایکسپورٹ ہاﺅس یا ٹریڈنگ ویئر ہاﺅس کی تجویز پیش کی گئی ہے تاکہ دونوں جانب کی بزنس کمیونٹی کو سہولیات میسر آئیں ۔ انہوں نے کہا کہ دونوں جانب اعتماد کی کمی ¾ انشورنس اور پے منٹ سے متعلق مسائل کے حل کے لئے اہم سفارشات پیش کی گئیں۔ زبیر موتی والا نے بتایا کہ افغان نائب صدر نے ان کی تجاویز سے مکمل طورر پر اتفاق کیا اور فوری طور پر پاکستانی بزنس کمیونٹی کو 6ماہ کے لئے ملٹی پل ویزے پی اے جے سی سی آئی کی سفارش پر جاری کرنے کا حکم دیا ۔ انہوں نے مزید بتایا کہ افغان نائب صدرنے افغانستان میں پاکستانی ایکسپورٹ پر ڈیوٹی کی شرح میں اضافے ¾ کامن ویلتھ آف انڈیپنڈنٹ سٹیٹس کو ایکسپورٹ پر فی کنٹینر 100ڈالر اور روڈ کے استعمال پر 110 فیصد ڈیوٹی سمیت پاکستانی بزنس کمیونٹی کو درپیش مشکلات اکنامک کمیٹی آف افغانستان کی سطح پر اٹھانے کی یقین دہانی بھی کرائی ۔ انہوں نے کہا کہ مجموعی طور پر پی اے جے سی سی آئی کے تجارتی وفد کا دورہ انتہائی کامیاب رہا اور اس دورے کے دور رس نتائج برآمد ہوں گے۔ محمد زبیرموتی والا نے میڈیا کو بتایا کہ پا کستان افغانستان جائنٹ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری اور افغانستان انوسٹمنٹ سپورٹ ایجنسی کے مابین دونوں ممالک کے درمیان سرمایہ کاری کے فروغ اور تجارتی روابط کو مزید مستحکم کرنے کےلئے مفاہمتی یادداشت پربھی دستخط ہوئے ہیںاور اس سے دونوں ممالک کی بزنس کمیونٹی کو خاطر فوائد حاصل ہوں گے۔

مزید : کامرس