حکومت جی ایس پی ہلس سٹیٹس سے بھر پور فائدے کے لئے منصوبہ بندی کرے لاہور چیمبر

حکومت جی ایس پی ہلس سٹیٹس سے بھر پور فائدے کے لئے منصوبہ بندی کرے لاہور چیمبر ...

                                                                                                              لاہور(کامرس رپورٹر) لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری نے حکومت پر زور دیا ہے کہ وہ جی ایس پی سٹیٹس سے بھرپور فائدہ اٹھانے کے لیے منصوبہ بندی اور اُن ستائیس کنونشنز پر مکمل عمل درآمد کرے جن پر اس سٹیٹس کے حصول کے لیے دستخط کیے گئے ہیں کیونکہ یورپین یونین کمیشن ہر دو سال بعد اس معاملے کا جائزہ لے گا۔ ان خیالات کا اظہار لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر انجینئر سہیل لاشاری نے لاہور چیمبر، ٹریڈ ڈویلپمنٹ اتھارٹی آف پاکستان اور سمال اینڈ میڈیم انٹرپرائزز ڈویلپمنٹ کے اشتراک سے منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ ٹریڈ ڈویلپمنٹ اتھارٹی آف پاکستان کے ڈائریکٹر جنرل شیر افگن نیازی، ڈبلیو ٹی او سیل کے سربراہ مجیب احمد خان، لاہور چیمبر کے نائب صدر کاشف انور ، سابق صدر شیخ محمد آصف، ایگزیکٹو کمیٹی اراکین چودھری افتخار بشیر اور محمد افضل نے بھی اس موقع پر خطاب کیا۔ انہوں نے کہا کہ جی ایس پی پلس سٹیٹس کے حصول سے پاکستان کو جہاں مواقع حاصل ہوئے ہیں وہاں چیلنجز کا بھی سامنا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری اس سلسلے میں اپنے ممبران کی مکمل رہنمائی کرتا رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ یورپین یونین کی جانب سے ملے اس موقع سے نہ صرف برآمدات کو فروغ حاصل ہوگا بلکہ سرمایہ کار بھی سرمایہ کاری کی جانب راغب ہونگے جس سے روزگار کے نئے مواقع پیدا اور معیشت مستحکم ہوگی۔ لاہور چیمبر کے نائب صدر کاشف انور نے کہا کہ جی ایس پی پلس سٹیٹس پر سیمینار منعقد کرنے کا مقصد لاہور چیمبر کے ممبران کو معلومات فراہم کرنا تھا تاکہ وہ اس موقع سے زیادہ بہتر طریقے سے فائدہ اٹھاسکیں۔ انہوں نے کہا کہ چونکہ چین کو جی ایس پی کی سہولت مزید میسر نہیں ہوگی لہذا ٹیکسٹائل کے شعبے میں پاکستان کو چین پر برتری حاصل ہوگی ، اسی طرح بھارت جی ایس پی (جنرل) کیٹگری میں ہوگا جبکہ پاکستان جی ایس پی پلس میں ہونے کی وجہ سے نسبتاً زیادہ فائدہ اٹھاسکے گا۔ ٹریڈ ڈویلپمنٹ اتھارٹی آف پاکستان کے ڈائریکٹر جنرل شیر افگن نیازی نے کہا کہ ٹریڈ ڈویلپمنٹ اتھارٹی آف پاکستان اپنے تمام وسائل بروئے کار لاکر برآمد کنندگان کو زیادہ سے زیادہ آگاہی فراہم کرے گی تاکہ وہ یورپین یونین سے بھرپور فائدہ اٹھاسکیں۔ انہوں نے کہا کہ تمام سٹیک ہولڈرز کو چاہیے کہ وہ اس ضمن میں اپنا اپنا بہترین کردار ادا کریں۔ ٹریڈ ڈویلپمنٹ اتھارٹی آف پاکستان ڈبلیو ٹی او سیل کے سربراہ مجیب احمد خان نے جی ایس پی پلس سٹیٹس کے ساتھ وابستہ اہم ٹائم لائنز کے بارے میں تفصیلی پریزنٹیشن دی۔ انہوں نے کہا گوکہ یہ سٹیٹس دس سال کے لیے ہے مگر یورپین یونین پارلیمنٹ اور یورپین یونین کونسل ہر دو سال بعد ستائیس کنونشنز کے نفاذ پر رپورٹ مرتب کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ اس سٹیٹس کے بعد پاکستان کو یورپین یونین کی مارکیٹ تک ساڑھے تین ہزار مصنوعات کے لیے ڈیوٹی فری رسائی حاصل ہوئی ہے جس سے فائدہ اٹھاکر برآمدات میں ایک ارب ڈالر تک اضافہ کیا جاسکتا ہے۔

مزید : کامرس