دہشتگردوں کو شہید قرار دینے کی سوچ کا خاتمہ کرنا ہو گا،صاحبزادہ حامد رضا

دہشتگردوں کو شہید قرار دینے کی سوچ کا خاتمہ کرنا ہو گا،صاحبزادہ حامد رضا

لاہور( نمائندہ خصوصی)سنی اتحاد کونسل پاکستان کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا نے کہا ہے کہ دہشتگردوں کو شہید قرار دینے والی سوچ کا خاتمہ ہوگا تو ملک میں امن آئے گا القاعدہ اور داعش والے دنیا بھر کے 80 فیصدمسلمانوں کو واجب القتل سمجھتے ہیں۔ بے گناہوں کے قتل کو ثواب سمجھنے والے گمراہ ہیں، مردان میں خود کش دھماکہ قابل مذمت ہے،سیاست و جمہوریت کو مال داروں نے ہائی جیک کررکھا ہے،بندوق برداروں کے ساتھ بندوق فراہم کرنے والوں کو بھی پکڑنا ہو گا، رینجرز معاملات کا مسئلہ حل کرنا وزیر اعظم کا امتحان ہے۔حکومت کی بیڈ گورننس کی وجہ سے پاک فوج کی قربانیاں ضائع ہورہی ہیں۔

حکومت کرپشن کرنے والوں کیلئے ڈیل اور ڈھیل کا رویہ چھوڑ دے ان خیالات کا اظہار انہوں نے جامعہ رضویہ میں سنی اتحاد کونسل کی کورکمیٹی کے ہنگامی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ صاحبزادہ حامد رضا نے مزید کہا کہ سانحہ ماڈل ٹاؤن پر بننے والے جسٹس باقر نجفی کمیشن کی رپورٹ منظر عام پر لائی جائے۔سانحہ ماڈل ٹاؤن کے مجرموں کو سزا نہ ملنا المیہ ہے،سوئزر لینڈ کے بینکوں میں پڑے پاکستان سے لوٹے گئے دو کھرب ڈالرز کی واپسی سے قوم کو 10سال کیلئے ہر قسم کے ٹیکسوں سے نجات دلائی جاسکتی ہے حکمرانوں کی نااہلی کی وجہ سے ہر سرکاری محکمہ ناچار اور بیمار ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...