مسلم دینی محاذکی طرف سے کشمیری نظربندوں کی حالت زار پر اظہار تشویش

مسلم دینی محاذکی طرف سے کشمیری نظربندوں کی حالت زار پر اظہار تشویش

سرینگر(اے پی پی) مقبوضہ کشمیرمیں مسلم دینی محاذ نے کشمیری نظربندوں کی حالت زار پر شدید تشویش ظاہر کرتے ہوئے انکی فوری رہائی پر زوردیا ہے ۔ کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق مسلم دینی محاذ کے صوبہ جموں کے صدر مولانا نثار احمد نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں آزادی پسندوں لطیف احمد وازہ اور عبدالغنی گونی کی بیس سال سے جاری مسلسل غیر قانونی نظربندی کی مذمت کرتے ہوئے کہاکہ اس طویل عرصے کے دوران انکے کئی عزیز و اقارب اس دار فانی سے کوچ کر گئے تاہم نہ تو انکے جنازے کو کندھا دے سکے اور نہ ہی ان کا چہرہ دیکھ سکے ۔ انہوں نے راجستھان پولیس کی جانب سے دونوں آزادی پسندوں کے رشتہ داروں کے ساتھ امتیازی سلوک پر افسوس ظاہر کرتے ہوئے اسے کشمیری عوام کی تذلیل قراردیا ۔ مولانا نثار احمد نے کہا کہ بھارت جموں وکشمیر پر اپنے غیر قانونی تسلط کو برقراررکھنے کیلئے کشمیری عوام کے ساتھ وہی توہین آمیز سلوک کررہا ہے جو قدیم زمانے سے فاتح قومیں اپنے مفتوحوں سے کرتی رہی ہیں۔

انہوں نے کہاکہ بھارت فوجی قوت کے بل بوتے پر اس کے خلاف اٹھنے والی ہرآواز کو دبارہا ہے جس کی ایک مثال ان دو نظر بندوں کی بیس سال سے طویل اسیری بھی ہے ۔ انہوں نے کشمیری نظربندوں کے صبر و استقامت، عزم و استقلال کو سلام پیش کرتے ہوئے کہا کہ پوری قوم ان کی صحت و سلامتی اور رہائی کیلئے دعا گو ہے۔

مزید : عالمی منظر


loading...