وہ شہری جس نے اتنے بچے پیدا کئے کہ جج نے واپس جیل بھیجنے کا فیصلہ کرلیا

وہ شہری جس نے اتنے بچے پیدا کئے کہ جج نے واپس جیل بھیجنے کا فیصلہ کرلیا
وہ شہری جس نے اتنے بچے پیدا کئے کہ جج نے واپس جیل بھیجنے کا فیصلہ کرلیا

  


نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ کا ایک شہری کسی جرم میں جیل گیا، اور جب وہ رہا ہوا تو توقع کی جا رہی تھی کہ اب وہ معاشرے کے لیے مفید ثابت ہو گا اور اچھے کام کرے گا مگر اس نے باہر نکل کر دن رات ایک ہی کام کیا، وہ تھا ”بچے پیدا کرنا۔“اس نے کچھ ہی سالوں میں 11خواتین سے 13بچے پیدا کر ڈالے۔ اس شخص کا نام نورمین بینیٹ ہے۔ نورمین نے اتنے سارے بچے پیدا کیے مگر اپنے ذمہ چائلڈ سپورٹ کی رقم سرکاری خزانے میں جمع نہ کروائی جو بڑھتے بڑھتے 50ہزار ڈالر ہو گئی جس پر اسے دوبارہ گرفتار کرکے عدالت میں پیش کر دیا گیا۔ عدالت میں جب اس کی کہانی سنائی گئی تو سب حیران تھے۔جج مارلن پوک نے ملزم کو دو آپشن دیئے کہ یا تو اپنے ذمہ واجب الادا رقم ایک مہینے میں ادا کر دو ورنہ 90دن کے لیے دوبارہ جیل چلے جاﺅ۔

مزید پڑھیں: ’جس آدمی نے مجھے ریپ کا نشانہ بنایا اُسی سے پیار ہوگیا اور پھر۔۔۔‘

عدالت کے ریکارڈز سے یہ بھی ظاہر ہوتا ہے کہ نورمین کے دراصل 13نہیں بلکہ 15بچے ہیں جو اس نے 13خواتین سے پیدا کیے ہیں مگر 2بچوں اور 2خواتین کی تصدیق نہیں ہو سکی۔ نورمین نے عدالت کو بتایا کہ میں ایک کنسٹرکشن کمپنی میں کام کرتا تھا مگر سردی کا موسم آنے کے باعث کام بند ہو گیا اور میں بے روزگار ہو گیا جس کی وجہ سے میں رقم ادا نہیں کر سکا۔ میں نے اوہاما ایئرپورٹ پر نوکری کے لیے درخواست دی مگر وہاں سے مجھے کوئی جواب نہیں دیا گیا۔ جج نے اتنے سارے بچوں کی پرورش کے حوالے سے سخت تشویش کا اظہار کرتے ہوئے نورمین کو ایک مہینے میں رقم ادا کرنے کا حکم دیا۔ اب نورمین آئندہ ہفتے عدالت پیش ہو گا۔ تب تک اگر اس نے رقم ادا نہ کی تو اسے 90روز کے لیے دوبارہ جیل بھیج دیا جائے گا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...