صوبائی دارالحکومت میں ٹریفک کا اژدھا آپے سے باہر، ٹریفک وارڈنز بے بس

صوبائی دارالحکومت میں ٹریفک کا اژدھا آپے سے باہر، ٹریفک وارڈنز بے بس

  



لاہور(اپنے خبر نگار سے) صوبائی دارالحکومت میں ٹریفک کا اژدھا ایک بار پھر آپے سے باہر،33سو سے زائد ٹریفک وارڈنز سڑکوں پر بے بسی کی تصویر بنے رہے ،مختلف علاقوں ایک موریہ اور دو موریہ پل ،بتی چوک ،داتا دربار ،راوی روڈ ،بکر منڈی ،سکیم موڑ ،بھاٹی چوک جین مندر ،جیل روڈ انڈر پاس ،ملتان روڈ فیروز پور روڈ سمیت اہم شاہراہوں پر ٹریفک کا بے پناہ رش،گھنٹوں تاخیر کا شکار لوگ گاڑیوں میں پارن بجاتے رہے۔ٹریفک پولیس کی جانب سے ہرکوشش ناکام ،مختلف علاقوں میں مقامی افراد نے رضاء کارانہ ڈیوٹیاں دیں ۔تفصیلات کے مطابق لاہور بھر میں شام کے بعد داخلی اور خارجی راستوں پر نیو اےئر نائٹ سے قبل ہی رش میں بے پناہ اضافہ ہو گیا جس سے گاڑیوں کی لمبی قطاریں شاہدرہ چوک سے کالا خطائی روڈ تک ، دوسری جانب بیگم کوٹ تک لگ گئیں جبکہ ٹریفک وارڈنز کی مدد کے لئے مقامی تھانہ شاہدرہ کی پولیس کو بھی طلب کر لیا گیا اور ڈی ایس پی ٹریفک اور سیکٹر انچارج ٹریفک کنٹرول کرنے شاہدرہ چوک میں موجود رہے ۔ راوی پل سے بتی چوک اور راوی روڈ تک ٹریفک کا رش دیکھنے میں آیا ۔دوسری جانب یادگار چوک کے اطراف کا علاقہ بھی بے ہنگم ٹریفک سے گھرا رہا اور یادگار چوک سے داتا دربار اور دوسری جانب سبزی منڈی سے لاری اڈے تک کا علاقہ بھی ٹریفک کی روانی متاثر ہوئی۔اسٹیشن کے علاقوں اور جی روڈ ،ملتان روڈ پر بھی ٹریفک کی روانی شدید متاثر ہوئی۔

رہی، اسی طرح سند ر ،چوہنگ اور سکیم موڑ کے علاقوں میں بھی ٹریفک انتہائی سست روی کا شکار رہی ۔

مزید : علاقائی


loading...