شا م ،الرقہ میں دو بڑی اجتماعی قبریں دریافت،شدید لڑائی جاری

شا م ،الرقہ میں دو بڑی اجتماعی قبریں دریافت،شدید لڑائی جاری

  



دمشق(آئی این پی)شام کے صوبہ الرقہ کے مغربی علاقے میں سیکورٹی اہلکاروں نے 2اجتماعی قبریں دریافت کرلیں جبکہ مغربی صوبے ادلب کے مقام التامانا میں صدر بشار الاسد کی حامی فوج اور القاعدہ سے وابستگی رکھنے والے باغیوں کے درمیان شدید لڑائی کا سلسلہ جاری ہے۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق شامی حکام کا کہنا ہے کہ الرقہ صوبے کے مغربی علاقے میں سکیورٹی اہلکاروں کو دو اجتماعی قبریں ملی ہیں۔ یہ قبریں درجنوں شہریوں اور شامی فوجیوں کی نعشیں سے بھری ہوئی ہیں۔ غالب امکان ہے کہ یہ قبریں جہادی تنظیماسلامک اسٹیٹ نے اپنے قبضے کے دور میں بنائی تھیں۔ شامی نیوز ایجنسی سانا (SANA) کے مطابق ان قبروں میں سے نعشوں کو باہر نکالنے میں کئی دن لگ سکتے ہیں کیونکہ ان قبروں کا حجم بہت وسیع ہے۔ یہ امر اہم ہے کہ شام اور عراق کے وسیع علاقے پر اسلامک اسٹیٹ کے قبضے کے دوران الرقہ کا شہر اس دہشت گرد تنظیم کی خود ساختہ خلافت کا دارالخلافہ تھا۔

دوسری جانب خانہ جنگی کے شکار ملک شام کے حالات و واقعات پر نگاہ رکھنے والے اپوزیشن کے مبصر گروپ سیرین آبزرویٹری برائے انسانی حقوق نے بتایا ہے کہ شمال مغربی صوبے ادلب کے مقام التامانا میں صدر بشار الاسد کی حامی فوج اور القاعدہ سے وابستگی رکھنے والے باغیوں کے درمیان شدید لڑائی کا سلسلہ جاری ہے۔

باغیوں کے خلاف شامی فوج کی کارروائیوں کو روسی فضائی مدد بھی دستیاب ہے۔ اندازوں کے مطابق شامی فوج اب مغربی ادلب کا کنٹرول حاصل کرنے کی کوشش میں ہے۔ اس لڑائی میں ہونے والی اڑسٹھ ہلاکتوں میں فوجیوں اور باغیوں کے ساتھ ساتھ عام شہری بھی شامل ہیں۔

مزید : عالمی منظر


loading...