7 تعلیمی بورڈز میں چیئرمین کی عدم تعیناتی سے انتظامی بحران

7 تعلیمی بورڈز میں چیئرمین کی عدم تعیناتی سے انتظامی بحران

  



لاہور(حافظ عمران انور) ہائر ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ کی عدم توجہی ،پنجاب کے سات تعلیمی بورڈز میں تاحال چیئرمین تعینات نہ ہو سکے،مذکورہ بورڈز میں شدید انتظامی بحران پیدا ہو گیا چیئرمین تعلیمی بورڈز کا اضافی چارج کمشنرز کو دیدیا گیا۔ذرائع کے مطابق بورڈ چیئرمین کا اضافی چارج ملنے کی وجہ سے کمشنرز کو ہر ماہ 50ہزار اعزازیہ ملے گا ۔ سر گودھا،ساہیوال،گوجرانوالہ، راولپنڈی،فیصل آباد اور ملتان بورڈز چیئرمین سے محروم ہیں ۔ ذرائع کے مطابق پنجاب کے 9تعلیمی بورڈزمیں سے7چیئرمین کے بغیرہی چل رہے ہیں،تعلیمی بورڈز میں ان اہم ترین انتظامی آسامیوں کے خالی ہونے کی وجہ سے مالی اور انتظامی امور متاثر ہیں جبکہ دوردراز سے آنیوالے طلبہ اور ان کے والدین کو شدید مشکلات و پریشانیوں کا سامنا ہے نیزآئندہ سال سے میٹرک اور انٹرمیڈیٹ کے امتحانات بھی متاثر ہونے کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے۔ذرائع کے مطابق ہائرایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ کی طرف سے چیئرمین بورڈز کی تعیناتی کیلئے سال 2017میں تین بار قومی اخبارات میں اشتہار دیا گیا، پہلی بار مارچ اور دوسری بارجون میں اشتہار دیا گیا،مطلوبہ تعلیمی قابلیت اور تجربہ پورا نہ ہونے کی بنا پربھی بیشتر امیدواروں کی درخواستیں مسترد کردی گئیں جبکہ موزوں امیدواروں کی طرف سے عدم دلچسپی بھی دیکھنے میں آئی۔ بعد ازاں چیئرمین کی تعیناتی کیلئے تیسری باراشتہار اگست میں دیا گیا جس میں کل 32امیدواروں نے درخواستیں جمع کروائیں،جانچ پڑتال کے بعد 11امیدواروں کو انٹرویو کیلئے بلایا گیااورجن میں سے دو امیدواروں کو چیئرمینزکی خالی آسامیوں پر تعینات کرنے کیلئے فائنل کیا گیا لیکن ناگزیر وجوہات کی بنا پر انکی حتمی سلیکشن کو روک لیا گیا۔اس سلسلے میں رابطہ کرنے پر سپیشل سیکرٹری ہائرایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ پنجاب احسان بھٹہ نے بتایاکہ چیف سیکرٹری پنجاب کی سربراہی میں قائم کمیٹی نے ساتوں تعلیمی بورڈز کے چیئرمین کے انٹرویوز مکمل کرلئے ہیں اور ہر تعلیمی بورڈکیلئے تین تین نام فائنل کئے گئے ہیں،تمام بورڈز کے چیئرمینوں کے نام حتمی منظوری کیلئے وزیراعلیٰ پنجاب کو بھجوادئیے گئے ہیں۔

مزید : صفحہ آخر