چارسدہ میں اے پی سی کے پلیٹ فارم سے تاجروں کی ’’امریکہ مردہ باد‘‘ ریلی

چارسدہ میں اے پی سی کے پلیٹ فارم سے تاجروں کی ’’امریکہ مردہ باد‘‘ ریلی

  



چارسدہ (بیور و رپورٹ) آل پارٹیز کانفرنس کے پلیٹ فارم سے امریکا مردہ باد ریلی و احتجاجی مظاہرے میں چند ایک سیاسی جماعتوں کے علاوہ باقی غائب۔ اے این پی ، قومی وطن پارٹی ، مسلم لیگ اور پیپلز پارٹی کی عدم شرکت نے سوالات اٹھا لئے۔ تاجر تنظیموں کا مظاہرے میں بھر پور شرکت کی ۔پی ٹی آئی کی طرف سے صرف دو افراد جبکہ جے یوآئی کے تین افراد نے مظاہرے میں شرکت کی ۔ تفصیلا ت کے مطابق ہفتہ کے روز جماعت اسلامی کے زیر اہتمام فاروق اعظم چوک میں آل پارٹیز کانفرنس کے پلیٹ فارم سے " امریکامر دہ باد" ریلی و احتجاجی مظاہرے میں اے این پی، قومی وطن پارٹی ، مسلم لیگ اور پیپلز پارٹی کی عدم شرکت نے سوالات اٹھا لئے ۔ دلچسپ امر یہ ہے کہ جے یوآئی کے تین اور تحریک انصاف کے صرف دو افراد نے ریلی اور احتجاجی مظاہرے میں شرکت کی ۔ دوسری طرف تاجر اتحاد نے احتجاجی مظاہرے میں بھر پور شرکت کی جبکہ متحدہ شاپ کیپرز فیڈریشن کی طرف سے جنرل سیکرٹری میاں رحم باچا موجود تھے ۔ القدس کے حوالے سے احتجاجی ریلی کے حوالے سے مرکزاسلامی میں منعقدہ اے پی سی میں تمام جماعتوں نے تاریخی احتجاج کا عندیہ دیا تھا مگر جماعت اسلامی کے سوا کسی جماعت نے امریکا مردہ باد ریلی میں بھر پور شرکت کو ضروری نہ سمجھا ۔ فاروق اعظم چوک میں احتجاجی مظاہرے سے خطاب کر تے ہوئے ۔ جماعت اسلامی کے ضلعی امیرمحمد ریاض خان ، ہارون خان ، پیر مسعود جان ، ، جمعیت علمائے اسلام کے تحصیل رہنماء مولانا لیاقت علی ،ڈاکٹر الطاف خان، تحریک انصاف کے عابد خان ، اجمل درانی تاجر تنظیموں کے رہنماؤ ں میاں رحم باچا ، لعل محمد لعل،حبیب اللہ ٹیلر اور دیگر نے القدس شریف کو صیہونی دار الخلافہ قرار دینے کو عالم اسلام کے خلاف ایک گھناؤنا سازش قرار دیا ۔ مقررین نے کہا کہ عالم اسلام کے نام و نہاد قیادت نے یہود و نصرٰی کے گٹھ جوڑ او ر توسیع پسندانہ اسلام دشمن سازشوں کے خلاف خاموش رہ کر ثابت کیا ہے کہ موجودہ عالم اسلام کے قیادت کے دعویدار سامراج کے پٹو ہیں اور پاکستان کے قومی سیاست میں شامل اکثریت سیاسی جماعتیں نہ تو اسلام پسند ہے اور نہ ہی حق پسند ہے ۔ مقررین نے کہا کہ بزور شمشیر اسلام دشمن قوتوں کا مقابلہ کیا جائیگا نہ کہ او آئی سی او ر نہ ہی دیگر برائے نام تنظیمیں مسلمانوں کے حقوق کے پاس دار ہیں ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...