سندھ کا بینہ،متحدہ بانی کے نام سے پبلک مقامات کے نام تبدیل کرنے کا فیصلہ

سندھ کا بینہ،متحدہ بانی کے نام سے پبلک مقامات کے نام تبدیل کرنے کا فیصلہ

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر)سندھ کابینہ نے صوبے میں بانی ایم کیو ایم کے نام سے قائم تمام عمارتوں ،پبلک مقامات اور جگہوں کے نام تبدیل کرنے اور این ٹی ایس پاس کنٹریکٹ ٹیچرز کو ریگولر کرنے کی منظوری دے دی۔ انہوں نے یہ فیصلہ ہفتہ کو سندھ سیکریٹریٹ میں منعقدہ کابینہ کے اجلاس میں کیا۔ کابینہ اجلاس میں یہ بھی فیصلہ کیا گیا کہبانی متحدہ اینٹی اسٹیٹ کام کرتا رہا ہے اس لئے انکے نام سے صوبے بھر میں جتنی بھی عمارتیں، پبلک مقامات یا دیگر جگہیں ہیں انکے نام تبدیل کیئے جائیں گے۔ وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ نے این ٹی ایس پاس کنٹریکٹ ٹیچرز کو ریگولر کرنے کی منظوری دی جس کی ریگولیشن اسمبلی ایکٹ کے ذریعے کی جائے گی۔کابینہ نے سندھ ایجوکیشن پرفارمنس کا بل بھی اسمبلی سے منظورکروایا جائے گا۔ پرفارمنس بل کے ذریعے ایجوکیشن میں بڑے پیمانے پر اصلاحات کی جائیں گی تاکہ تعلیم بہتر کیا جاسکے۔ وزیر اعلی سندھ نے کہا کہ اچھے پڑھانے والے ٹیچر کو مراعات دی جائیں گی۔ وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا کہ ہم نے 2011میں سندھ بینک نؤں دیرو میں محترمہ شہید بے نظیر بھٹو کی برسی کے موقع پر قائم کیا تھا جس میں صدر آصف علی زرداری نے پہلا اکاؤنٹ کھلوایا تھا۔ واضح رہے کہ کابینہ کے ایجنڈے میں سمٹ بینک کا سندھ بینک سے انضمام ، سندھ پولیس (پوسٹنگ ، ٹرانسفر اورٹینیور)رولز 2017، ایس پی پی آر اے ایکٹ 2009میں ترمیم، سندھ ویلفیئر اور جانورو ں کے تحفظ کا ایکٹ 2017اور کوئی اضافی ایجنڈا صدارت کرنے والے کی اجازت سے پیش کرنا شامل تھے۔ سمٹ بینک کے سندھ بینک میں انضمام پر تبادلہ خیال کیا گیا، جس کے لئے خصوصی طورپر سندھ بینک کے صدر طارق احسن اور سی ای او سندھ بینک سعید جمالی نے شرکت کی۔ کابینہ اجلاس میں سندھ پولیس(پوسٹنگ، ٹرانسفر اور ٹینیور) رولز 2017 پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ سندھ کابینہ کے اراکیں کو ڈرافٹ پولیس رولز جاری نہیں کیا گیا تھا جس پر وزیر اعلی سندھ نے اپنی ناراضگی کا اظہار کیا۔ کابینہ نے وزیر قانون کو 15 یوم کے اندر ڈرافٹ رولز جاری کرنے کا وقت دے دیا، اس لیے یہ رولز اگلے کابینہ کیاجلاس میں زیر بحث آئیں گے۔ کابینہ میں ایس پی پی آر اے ایکٹ 2009 میں ترمیم پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ ایس پی پی آر اے میں سیکشن 2(پی) سروسز لفظ کی تشریح کو پنجاب پبلک پروکیورمنٹ ایکٹ 2009 کی سروسز کی تشریح کی طرح ترمیم کیاگیاجس کی کابینہ نے منظوری دے دی۔ کابینہ نے سندھ ویلفیئر اینڈ پریویشن آف کیورلٹی آف اینیمل ایکٹ 2017 کے ڈرافٹ پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ سیکریٹری وائلڈ لائف آصف حیدر شاہ کابینہ کو آگاہی دی کہ اس تجویز کردہ ایکٹ میں جانورں کے ساتھ ظلم یعنی مارنا ، پیٹنا ، زیادہ وزن رکھنا ،خوف زدہ کرنا کے خلاف قانون بنانا ہے۔ جانوروں کو غیر ضروری ٹرانسپورٹیشن میں تکلیف دینا، جانوروں کو آپس میں لڑانا اور شرطیں لگانا اس قانون کا حصہ ہیں۔ کابینہ نے وزیر بلدیات، سیکریٹری وائلڈ لائف، وزیر لائف اسٹاک پر مشتمل کمیٹی قائم کر دی، یہ کمیٹی رولز ایک ہفتے کے اندر بنائے گی اور ڈرافٹ وزارت قانون کو بھی پیش کیا جائے گا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...