پنجاب کے پانچویں بڑے ڈویژن، بہاولپور میں موٹر بائیک ایمبولینس سروس کا آغاز

پنجاب کے پانچویں بڑے ڈویژن، بہاولپور میں موٹر بائیک ایمبولینس سروس کا آغاز

  



بہاولپور، خانقاہ شریف(ڈسٹرکٹ رپورٹر، نمائندہ پاکستان )وزیراعلی پنجاب کی ہدایت پر پنجاب ایمرجنسی سروس ریسکیو1122نے ایک اور سنگ میل عبور کرتے ہوئے بہاولپور میں موٹر بائیک ایمبولنس سروس کا باقاعدہ آغازکیا ہے۔ حکومت پنجاب کے صوبہ بھر میں9 ڈویژنل ہیڈ کواٹرزپر 900 موٹر(بقیہ نمبر22صفحہ12پر )

بائیک ایمبولینس سروس شروع کرنے کا فیصلہ کے تحت لاہور ، گوجرانوالہ ،ساہیوال اور ملتان کے بعدبہا ولپور پنجاب کا پانچواں بڑا ڈویژن ہے جہاں موٹر بائیک ایمبولینس سروس شروع کر دی گئی ہے۔اس حوالے سے بہاولپور میں قائد اعظم میڈیکل کالج کے آڈیٹوریم میں ایک پر وقار تقریب کا انعقاد کیا گیا ۔تقریب کے مہمان خصوصی صوبائی وزیرامداد باہمی ملک محمد اقبال چنڑ تھے جبکہ بطور مہمان اعزاز ڈائریکٹر جنرل ریسکیو 1122 ڈاکٹر رضوان نصیر بھی شریک ہوئے ۔ تقریب میں ایم این اے بیگم پروین مسعود بھٹی ،ایم پی اے حسینہ ناز ، ایم پی اے شعیب اویسی ،ڈپٹی میئر ملک منیر اقبال چنڑ ،یونین ناظمین ،ڈاکٹر افضل ،حاجی ارشاد احمد ،فرغام اشتیاق کے علاوہ گورنمنٹ آفیسر ز ،عوامی نمائندے پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا ،سیاسی و سماجی کارکنان سمیت کثیر تعدا د میں لوگوں نے شرکت کی۔ڈائریکٹر جنرل رضوان نصیر نے بتایا کہ موٹر بائیک ایمبولینس سروس اب تک 17 ہزار لوگوں کو ریسکیو کر چکی ہے اور جائے وقوعہ پر پہنچنے کا اوسط وقت 4.7 منٹ ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ یہ موٹر سائیکل ایمبولینس بطور منی ایمبولینس استعمال ہو گی اور اس میں زندگی بچانے والے آلات موجود ہیں۔ صوبائی وزیر ملک محمد اقبال چنڑنے اپنے خطا ب میں کہا کہ وزیر اعلی پنجاب جنوبی پنجاب کی ترقی کیلئے کوشاں ہیں۔ ان کی انتھک محنت کے نتیجے میں لوگوں کے معیار زندگی میں بہتری آ رہی ہے۔ محکمہ تعلیم اور صحت کے شعبے میں حکومت پنجاب انقلابی اقدامات کر رہی ہے۔ ریسکیو1122 موٹر بائیک ایمبولینس سروس اس کا منہ بولتا ثبوت ہے۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈویژنل ایمرجنسی آفیسر ملک آصف چنڑ نے مہمانوں کا شکریہ ادا کیا ۔ انہوں نے ریسکیو ئرز سے کہا کہ اب ان کے کندھوں پر عائدذمہ داری کا بوجھ مزید بڑھ گیا ہے اور ریسکیوئرز یقیناًاس سے بہتر طور پر نبرد آزما ہو ں گے۔تقریب کے اختتام پر ریسکیو 1122 موٹر بائیک ایمبولینس کا شہر بھر میں فلیگ مارچ بھی کیا گیا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...