ایکشن موویز کے کنگ رجنی کانت نے حقیقی زندگی کا سب سے بڑا دھماکہ کردیا، وہ اعلان کردیا کہ سارے ہیرو، ہیروئنیں بھاگ بھاگ کر ان کے پاس پہنچ جائیں گی، کوئی فلم نہیں بنا رہے بلکہ ۔۔۔

ایکشن موویز کے کنگ رجنی کانت نے حقیقی زندگی کا سب سے بڑا دھماکہ کردیا، وہ ...
ایکشن موویز کے کنگ رجنی کانت نے حقیقی زندگی کا سب سے بڑا دھماکہ کردیا، وہ اعلان کردیا کہ سارے ہیرو، ہیروئنیں بھاگ بھاگ کر ان کے پاس پہنچ جائیں گی، کوئی فلم نہیں بنا رہے بلکہ ۔۔۔

  



چنائی (ڈیلی پاکستان آن لائن) جنوبی بھارت کی فلم انڈسٹری کے بے تاج بادشاہ اور ناممکن کو ممکن کردکھانے والے ایکشن کرنے والے ہیرو رجنی کانت نے اپنی نئی سیاسی جماعت بنانے کا اعلان کردیا ، انہوں نے لوگوں سے کہا ہے کہ وہ ان کی پارٹی کے سپاہی بن کر گراس روٹ لیول پر کرپشن کے خلاف جنگ کا آغاز کریں۔

ہندوستان ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق طویل عرصے سے اہلِ سیاست کی نظریں رجنی کانت پر جمی ہوئی تھیں ، لوگ ان کے بارے میں طرح طرح کے اندازے قائم کر رہے تھے لیکن اتوار کے روز انہوں نے سارا تجسس نئی سیاسی جماعت تشکیل دینے کے اعلان کے ساتھ ختم کردیا ہے، انہوں نے کہا ہے کہ وہ تامل ناڈو کی ریاستی اسمبلی کے انتخابات میں تمام 234 نشستوں پر اپنے امیدوار کھڑے کریں گے۔

ریاست تامل ناڈو کے صدر مقام چنائی میں لوگوں کے جم غفیر کے سامنے رجنی کانت نے انتہائی مختصر خطاب کے دوران اپنے مستقبل کے ارادوں سے پردہ اٹھایا۔

انہوں نے کہا کہ جمہوریت کی شکل بہت زیادہ بگڑ چکی ہے ، سیاست میں گزشتہ دنوں کچھ ایسے واقعات پیش آئے ہیں جن کی وجہ سے ریاست تامل ناڈو پورے بھارت میں مذاق بن کر رہ گئی ہے۔ جمہوریت کے نام پر سیاستدان ہمارا پیسہ لوٹ رہے ہیں، اب یہ سب ختم ہونا چاہیے جس کیلئے تحریک چلائیں گے اور تامل ناڈو کے ایک ایک گاﺅں میں جائیں گے۔

رجنی کانت نے کہا کہ حالات بہت دگرگوں صورت اختیار کرچکے ہیں اور ایسے وقت میں اگر وہ سیاست میں نہیں آتے تو یہ ان کیلئے انتہائی شرم کا مقام تھا کیونکہ لوگوں نے ساری زندگی انہیں پیار اور عزت دی ہے اس لیے اب ان لوگوں کیلئے کچھ کرنا ہوگا۔

رجنی کانت نے واضح کیا کہ ان کی سیاسی جماعت کی بنیاد ایمانداری، سخت محنت اور خلوص پر کھڑی کی جائے گی، ہماری جماعت کا نعرہ ’ اچھا کرو، اچھا بولو تو اچھا ہوگا‘۔

رجنی کانت نے باضابطہ طور پر سیاسی جماعت تشکیل نہیں دی تاہم انہوں نے اپنے مداحوں سے اپیل کی ہے کہ وہ سیاست سے دور رہیں کیونکہ وہ ریاستی اسمبلی کے انتخابات سے پہلے درست وقت پر جماعت تشکیل دے دیں گے۔

مزید : Breaking News /اہم خبریں /بین الاقوامی /تفریح