دنیا کی وہ جگہ جہاں آپ شیر خرید کر اس کا گوشت بھی کھاسکتے ہیں، ایک شیر کتنے کا ملتا ہے؟ قیمت آپ کے تمام اندازوں سے کہیں زیادہ

دنیا کی وہ جگہ جہاں آپ شیر خرید کر اس کا گوشت بھی کھاسکتے ہیں، ایک شیر کتنے کا ...
دنیا کی وہ جگہ جہاں آپ شیر خرید کر اس کا گوشت بھی کھاسکتے ہیں، ایک شیر کتنے کا ملتا ہے؟ قیمت آپ کے تمام اندازوں سے کہیں زیادہ

  



وینٹیان(مانیٹرنگ ڈیسک) شیر اور چیتا معدومی کے انتہائی خطرے سے دوچار جانوروں کی فہرست میں سب سے اوپر ہیں لیکن ایک ملک ایسا ہے جہاں یہ کھلے عام فروخت کیے جاتے ہیں اور لوگ انہیں خرید کر کاٹتے اور ان کا گوشت کھاتے ہیں۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق شیروں کی یہ خریدوفروخت ایشیائی ملک لیوس میں ہوتی ہے جہاں ان کے فارمز قائم ہیں۔ کچھ عرصہ قبل لیوس حکومت کی طرف سے ان فارمز پر پابندی عائد کی گئی تھی تاہم وہاں اب بھی شیر پالے اور فروخت کیے جاتے ہیں۔تاہم ان کی قیمت اس قدر زیادہ ہے کہ کھرب پتی امراءہی اس کی سکت رکھتے ہیں۔

دنیا سے باہر پہلا ہوٹل بنانے کی تیاری، یہ کہاں بنایا جائے گا اور آپ اس میں کیسے قیام کرسکتے ہیں؟ عقل دنگ کر دینے والی خبر آگئی

لیوس میں ایک شیر کی قیمت 3لاکھ 40ہزار پاﺅنڈ (تقریباً 5کروڑ روپے) تک ہوتی ہے۔ ان کے خریداروں میں اکثریت چینی باشندوں کی ہوتی ہے۔ رپورٹ کے مطابق لیوس کے فارمز پر شیروں کو انتہائی ناگفتہ بہ حالت میں پالا جاتا ہے اور ان کی افزائش نسل کروائی جاتی ہے اورحکومت کی طرف سے پابندی کے اعلان کے باوجود ان فارمز کی تعداد میں اضافہ ہو رہا ہے۔ خریدار ان کا گوشت کھانے کے علاوہ ان کی ہڈیوں اور جلد سے شراب بھی کشید کرتے ہیں اور انہیں مردانہ طاقت کی ادویات میں بھی استعمال کیا جاتا ہے۔شیروں کے تحفظ کی مہم چلانے والی ماحولیاتی تحقیقاتی ایجنسی کے سربراہ ڈیبی بینکس کا کہنا ہے کہ ”لیوس حکومت زبانی جمع خرچ کے سوا کچھ نہیں کر رہی اور شیروں کے گوشت، ہڈیوں اور کھال کی مانگ میں اضافے کے باعث وہاں اس کا کاروبار بھی روزافزوں ہو رہا ہے۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...