آدمی نے ائیرپورٹ پر اپنی گاڑی ویلٹ پارکنگ کے لئے دے دی، جب واپس آیا اور کار میں لگا کیمرہ دیکھا تو ایسا انکشاف کہ سوچ بھی نہیں سکتا تھا، اس کے پیچھے ویلٹ گاڑی کے ساتھ کیا کرتا رہا؟ جان کر آپ بھی اپنی گاڑی دینے سے پہلے بار بار سوچیں گے

آدمی نے ائیرپورٹ پر اپنی گاڑی ویلٹ پارکنگ کے لئے دے دی، جب واپس آیا اور کار ...
آدمی نے ائیرپورٹ پر اپنی گاڑی ویلٹ پارکنگ کے لئے دے دی، جب واپس آیا اور کار میں لگا کیمرہ دیکھا تو ایسا انکشاف کہ سوچ بھی نہیں سکتا تھا، اس کے پیچھے ویلٹ گاڑی کے ساتھ کیا کرتا رہا؟ جان کر آپ بھی اپنی گاڑی دینے سے پہلے بار بار سوچیں گے

  



لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں ایک شخص بیرون ملک گیا اور اپنی بی ایم ڈبلیو گاڑی پارکنگ کے ڈرائیورز کے حوالے کر گیا۔ واپس آ کر اس نے دیکھا تو گاڑی کا کچھ ایسا حشر ہو چکا تھا کہ آئندہ ہر کوئی گاڑی پارکنگ کے ڈرائیوروں کے حوالے کرنے سے پہلے سو بار سوچے گا۔ دی مرر کی رپورٹ کے مطابق ٹامز گوف نامی شخص سلوواکیہ میں اپنے رشتہ داروں سے ملاقات کے لیے ایسیکس ایئرپورٹ سے روانہ ہوا۔ اس کی گاڑی پانچ روز تک ایئرپورٹ کی پارکنگ میں ہی رہی۔ واپس آ کر اس نے گاڑی کے ڈیش کیمرے کی فوٹیج دیکھی تو دنگ رہ گیا کہ پارکنگ کے ڈرائیورز اس کی گاڑی کو بے دریغ استعمال کرتے رہے تھے۔

’47 سال قبل میری گرل فرینڈ نے مجھ سے تعلق توڑا تو اس نے مجھے یہ تحفہ دیا تھا، یہ میں نے آج تک نہیں کھولا لیکن اب۔۔۔‘

ڈرائیوروں نے اس کی گاڑی 200کلومیٹر تک چلا ڈالی تھی۔ وہ اس پر مکڈونلڈز بھی گئے اور گاڑی میں بیٹھ کر بھی اشیاءکھاتے رہے جن کے ریپر اب تک گاڑی کی پچھلی سیٹ پر پڑے تھے۔ فوٹیج میں ٹامز نے دیکھا کہ ڈرائیور اس کی گاڑی کے بونٹ پر بیٹھ کر سگریٹ نوشی بھی کرتے رہے۔ اس تمام سفر کے دوران انہوں نے بارہا گاڑی کو سڑک کنارے لاوارث کھڑا بھی کیا اور انتہائی گندی کیچڑ والی جگہوں پر بھی لیجاتے رہے۔ٹامز کا کہنا تھا کہ ”میری گاڑی پک اینڈ ڈراپ کے لیے بھی استعمال ہوتی رہی۔ جب میں واپس آیا تو وہ کیچڑ سے لتھری ہوئی تھی اور اس کے اندر بھی گند مچا ہوا تھا۔“ رپورٹ کے مطابق ٹامز کی شکایت پر پارکنگ کے دو ڈرائیورز کو نوکری سے نکال دیا گیا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /برطانیہ


loading...