شاہانہ مزاج ڈاکٹرڈیوٹی سے غائب ‘ مریضہ جاں بحق‘ ورثا کا احتجاج ‘ انکوائری ٹیم تشکیل

شاہانہ مزاج ڈاکٹرڈیوٹی سے غائب ‘ مریضہ جاں بحق‘ ورثا کا احتجاج ‘ انکوائری ...

ڈیرہ غازی خان (سٹی رپورٹر) ڈسٹرکٹ ہسپتال میں ڈاکٹرز کی مبینہ غفلت اور کارڈیالوجسٹ کی عدم موجودگی کے باعث ہارٹ اٹیک کی مریضہ نے تڑپ تڑپ کر جان دے دی ،احتجا ج پرڈپٹی کمشنر نے دو رکنی انکوائری کمیٹی بنا کر چوبیس گھنٹوں میں رپورٹ طلب کر لی تفصیل کے مطابق بلخ سرو ر (بقیہ نمبر41صفحہ12پر )

کالونی ڈیرہ کے رہائشی فرید احمد سہرانی کی اہلیہ خدیجہ بی بی کو اچانک ہارٹ اٹیک کے باعث ڈسٹرکٹ ہسپتال کے ایمرجنسی وارڈ میں لایا گیا تو وہاں پر کال کر نے کے باوجود کارڈیالوجسٹ پروفیسر ڈاکٹر عامر سعید نہ آئے اور مریضہ کی حالت مزید بگڑ گئی تاہم تقریباً دو گھنٹے کی تاخیر کے بعد ڈاکٹر خلیل الرحمن نے آکر مریضہ کا چیک اپ کیا تو اس وقت وہ آخری سانسیں لے رہی تھی اور کچھ دیر بعد دم توڑ گئیں جس پر مریضہ کے لواحقین سابق ناظم کلیم اللہ سہرانی ،فرید احمد سہرانی ،فاروق احمد غوری اور دیگر نے شدید احتجاج کر تے ہوئے کہا کہ ہماری موجودگی میں ایم ایس ڈاکٹر شاہد سلیم کی طرف سے بار بار کال کر نے کے باوجود کارڈیالوجسٹ ڈاکٹر عامر سعید کے نہ آنے اور بوقت علاج میسر نہ ہو نے سے مریضہ کی موت واقع ہو ئی ہے انہوں نے کمشنر ڈیرہ طاہر خورشید اور ڈپٹی کمشنر میاں اقبال مظہر مہار سے مطالبہ کیا ہے کہ کارڈیالوجسٹ ڈاکٹر عامر سعید کے خلاف سخت ترین کاروائی عمل میں لائی جا ئے دو سری طرف ڈپٹی کمشنر مظہر اقبال مہار نے واقعہ کا نوٹس لیتے ہو ئے اسسٹنٹ کمشنر کی سر براہی میں دو رکنی کمیٹی تشکیل دے کر چوبیس گھنٹے کے اندر رپورٹ طلب کر لی انہوں نے کہا کہ رپورٹ کی روشنی میں واقعہ کے ذمہ داران کے خلاف کاروائی عمل میں لائی جا ئے گی ۔

مریض جاں بحق

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...