بنگلہ دیش میں خونی انتخابات ،17افراد ہلاک، حسینہ واجد کی پارٹی کو برتری،اپوزیشن نے نتائج مسترد کر دیئے

بنگلہ دیش میں خونی انتخابات ،17افراد ہلاک، حسینہ واجد کی پارٹی کو ...

ڈھاکا( مانیٹرنگ ڈیسک ، نیوز ایجنسیاں ): بنگلادیش ہونیوالے انتخابات خونیں ثابت ہوئے جن میں پولنگ کے روز 18افراد ہلاک اور 900سے زائد زخمی ہو گئے ان انتخابات میں برسراقتدار شیخ حسینہ واجد کی جماعت عوامی لیگ نے کامیابی حاصل کر لی ہے، حکمران جماعت 300 میں سے 241 نشستیں حاصل کرکے ایک بار پھر حکومت بنانے کی پوزیشن مین آ گئی بنگلہ دیش نیشنل پارٹی کی سربراہی میں اپوزیشن اتحاد اب تک صرف 7نشستیں جیتنے میں کامیاب ہوا ہے ،اپوزیشن جماعتوں نے الیکشن نتائج کو مسترد کر دیا ہے اور غیر جانبدار حکومت کی نگرانی مین دوبارہ انتخابات کا مطالبہ کر دیا ہے، بی بی سی اور دوسری بین الاقوامی خبر رساں ایجنسیوں کے مطابق گزشتہ روز جب پولنگ شروع ہوئی تو ملک بھر میں سیکڑوں پولنگ سٹیشنز پر حکومتی جماعت کی مبینہ دھاندلی کیخلاف اپوزیشن جماعتوں کے ارکان نے احتجاج کیا ان ہنگاموں اور مار کٹائی میں متعدد جگہوں پر پولیس اور مظاہرین کے درمیان بھی جھڑپیں بھی ہوئیں زیادہ تر ہلاکتیں پولیس فائرنگ اور حکومتی جماعت کے کارکنوں کے حملوں میں ہوئیں ان جھڑپوں میں بنگلہ دیش نیشنل پارٹی کے کئی امیدوار بھی زخمی ہوئے جبکہ ہلاک ہونیوالے زیادہ تر افراد کا تعلق بھی اپوزیشن جماعتوں سے ہے، انتخابات میں مجموعی طور پر 57 امیدواروں نے بائیکاٹ بھی کیا ۔حکومت نے پروپیگنڈا روکنے کے نام پر انٹرنیٹ سروس بند رکھی جبکہ بی بی سی کے مطابق اس کے نمائندے نے الیکشن سے قبل چٹاگانگ شہر میں بھرے ہوئے بیلٹ باکس دیکھے ہیں۔انتخابات میں وزیر اعظم شیخ حسینہ واجد لگاتار تیسری بار وزارت عظمی کیلئے پْرامید ہیں جبکہ ان کی مضبوط حریف خالدہ ضیاء کرپشن الزامات میں جیل میں سزا بھگت رہی ہیں۔ بنگلا دیش میں شدید عوامی احتجاج اور مظاہروں کے باعث وزیراعظم حسینہ واجد انتخابات کے انعقاد پر مجبور ہوئیں۔کسی بھی ممکنہ ہنگامی آرائی سے نمٹنے کیلئے ملک بھر میں 6 لاکھ سکیورٹی اہلکاروں کو تعینات کیا گیا تھا۔ 300 نشستوں کیلئے ہونیوالے انتخابات میں تقریبا 10 کروڑ لوگ ووٹ دینے کے اہل تھے۔۔پولیس کے مطابق اپوزیشن اور حکمراں جماعت کے کارکنوں میں جھڑپوں کے دوران 6 افراد مارے گئے جبکہ تین افراد پولیس کی فائرنگ سے ہلاک ہوئے اور اپوزیشن کارکنوں کے حملے میں ایک اہلکار بھی مارا گیا ،بی بی سی کے مطابق کئی پولینگ سٹیشنوں پر ووٹنگ شروع ہونے سے قبل بیلٹ پیپروں سے بھرے بیلٹ بکس پکڑے گئے۔ بنگلہ دیش کی اپوزیشن جماعت نے انتخابی نتائج مسترد کردیئے ہیں اور نئے انتخابات کا مطالبہ کیا ہے۔خبرایجنسی کے مطابق اپوزیشن رہنما کمال حسین نے الیکشن کمیشن دھاندلی زدہ نتائج کو کالعدم قرار دے دیا اور غیر جانبدار حکومت کی زیرنگرانی نئے انتخابات کرائے کا مطالبہ کیا ہے ۔

مزید : صفحہ اول


loading...