سیاسی قائدین کا نام ای سی ایل میں شامل، قائمہ کمیٹی داخلہ کا نوٹس

سیاسی قائدین کا نام ای سی ایل میں شامل، قائمہ کمیٹی داخلہ کا نوٹس

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)چیئرمین قائمہ کمیٹی برائے داخلہ سینیٹر الرحمن ملک نے سیاسی قائدین و دیگر افراد کے نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) میں شامل کرنے پرسْوموٹو نوٹس لے لیا۔اس حوالے سے بتایا گیا ہے سینیٹر رحمٰن ملک نے ملک کی سیاسی قائدین و دیگر کو ای سی ایل میں شامل کرنے پر وزارت داخلہ، وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) اور قومی احتساب بیورو (نیب) کمیٹی کو وضاحت پیش کر نے کی ہدایت کردی۔ ای سی ایل میں شامل اور زیرتفتیش شامل نہیں کئے گئے افراد کی لسٹیں 3 روز میں کمیٹی کو فراہم کی جائے۔سینیٹر رحمن ملک نے کہا وزارت داخلہ کمیٹی کو واضح کرے ای سی ایل میں شامل کرنے کیلئے کیا طریقہ کار اور پالیسی اپنائی گئی،انکا کہنا ہے بتایا جائے کس کو کس بنیاد پر ای سی ایل میں شامل کیا گیا ہے اور دیگر زیرتفتیش افراد کو کیسے شامل نہیں کئے گئے ہیں۔ وزارت داخلہ سے کہا ان تمام افراد کی لسٹ فراہم کی جائے جن کیخلاف انکوائریز تو چل رہے ہیں مگر ان کے نام ای سی ایل میں شامل نہیں کئے گئے۔واضح رہے 28 دسمبر کو سپریم کورٹ کی ہدایت پر جعلی اکاؤنٹس کیس میں 172 افراد کے نام ای سی ایل میں شامل کیے گئے جن میں سابق صدر اور پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری، چیئرمین بلاول بھٹو زرداری اور فریال تالپور بھی شامل ہیں۔ان کے علاوہ جن بڑی شخصیات کا نام ای سی ایل میں شامل کیا گیا ہے ان میں موجودہ وزیرِاعلیٰ سندھ مراد علی شاہ، سابق وزیرِاعلیٰ قائم علی شاہ اور معروف بزنس مین ملک ریاض کا نام شامل ہے۔ گزشتہ روز وفاقی وزیرِاطلاعات فواد چوہدری نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا تھا وفاقی کابینہ نے جعلی اکاؤنٹس کیس میں 172 افراد کے نام ای سی ایل میں شامل کرنے کی منظوری دیدی ہے۔

داخلہ کمیٹی نوٹس

مزید : صفحہ اول


loading...