افغانستان کے سیاسی تصفیے کی جانب بڑھنے کا امکان ہے ، پینٹاگان

افغانستان کے سیاسی تصفیے کی جانب بڑھنے کا امکان ہے ، پینٹاگان

واشنگٹن( آن لائن)امریکی محکمہ دفاع پینٹاگان نے کہا ہے کئی محاذوں پر چیلنجوں کے باوجود اس بات کا امکان ہے حالیہ تاریخ کا یہ ایسا لمحہ ہو جب افغانستان سازگار سیاسی تصفیے کی جانب بڑھ رہا ہے۔ یہ بات پینٹاگون کی جانب سے جاری کی گئی ایک رپورٹ میں کہی گئی ہے جس میں حالیہ فوجی کشیدگی اور سفارتی اقدامات کے اثرات کی جانب دھیان مبذول کرایا گیا ہے۔ سالانہ تجزئے پر مبنی اس رپورٹ میں جو امریکی کانگریس کو پیش کی جاتی ہے، پینٹاگان نے افغانستان کی لڑائی کے بارے میں امریکی قانون سازوں کو تفصیلی رپور ٹ دی ہے جس میں افغانستان میں حاصل کردہ پیش رفت اور 2018ء اور 2019ء کے مالی سالوں کے دوران درپیش چیلنجوں کے بارے میں تفصیل پیش کی گئی ہے۔اس میں افغانستان کو درپیش چیلنجوں میں سیاسی عدم استحکام، قومی سلامتی فورس کی صلاحیتیں اور دیگر علاقائی طاقتوں کی مداخلت سے متعلق جائزہ پیش کیا گیا ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ''افغانستان کی موجودہ عسکری صورت حال تعطل کا شکار ہے۔ 2018ء میں اضافی مشیروں اور معاونین کے شامل ہونے سے صورتحال میں استحکام اور طالبان کی پیش قدمی کی رفتار میں کمی آئی جنھوں نے 2011ء اور 2016ء کے دوران امریکی فوج میں کمی لانے کا فائدہ اٹھایا''۔رپورٹ کے مطابق، ''سفارتی، مذہبی، فوجی اور سماجی دباؤ بڑھانے کی بنا پر وضع کردہ حکمت عملی، ساتھ ہی بین الاقوامی کارروائی میں اضافے کی وجہ سے طالبان کی سینئر قیادت مباحثے پر مجبور ہوئی وہ افغان حکومت کیساتھ مذاکرات کا اجرا کرے۔

پینٹاگون

مزید : صفحہ اول


loading...