قائد جمعیت کو عوام نے انتخابات میں مسترد کیا ،فیصل گنڈہ پور

قائد جمعیت کو عوام نے انتخابات میں مسترد کیا ،فیصل گنڈہ پور

ڈیرہ اسماعیل خان(بیورورپورٹ)پی ٹی آئی کے ممبرصوبائی اسمبلی سردارفیصل امین خان گنڈہ پورنے کہاہے کہ مولانافضل الرحمان کوعوام نے مستردکیاہے ۔ملین مارچ عوام کے مینڈیٹ کی توہین ہے ۔ملین مارچ ناکامی سے دوچارہوگا۔پولیس لائن میں پولیس کے لیے ہسپتال کی تعمیر کاکام مکمل ہوگیاہے جس کاایک دوروز میں افتتاح ہوجائے گا۔خیبرپختونخوامیں غریب ونادارعوام کی سہولت کے لیے مزید 8لاکھ انصاف صحت کارڈزبنائے جا رہے ہیں ۔مفتی محمودہسپتال میں بچوں کے وارڈکی تعمیر مکمل ہوچکی ہے ۔ ٹانک اڈہ سے ٹرانسپورٹ کا اڈہ ظفرآباد کے قریب منتقل ہورہاہے ۔ بیوٹیفکیشن پروگرام کے فیز ٹوکی منظوری ہوچکی ہے مزید نئے پارکس بنائے جائیں گے ۔چارجنوری2019سے گیس کی فراہمی کے لیے کام کاافتتاح کردیاجائے گا اوران علاقوں میں گیس پائپ لائن ،ٹی بی ایس وغیرہ پرکام کیاجائے گاجن کو سیاسی بنیادوں پرماضی میں نظرانداز کیاگیا۔ عوام کے مسائل حل کرکے دکھائیں گے۔ ان خیالات کااظہارانہوں نے اپنی رہائشگاہ الامین ہاؤس میں میڈیاکے نمائندوں سے خصوصی گفتگوکے دوران کیا۔فیصل امین گنڈہ پور نے کہاکہ ہماری کوششوں سے خیبرپختونخواحکومت نے پولیس کے شہداء کے لیے 22کروڑ70لاکھ روپے کی منظوری دے دی ہے اورعنقریب پورے صوبے اورباالخصوص ڈیرہ اسماعیل خان کے شہداء کوچیکوں کی تقسیم کردی جائے گی ۔ عوام کی تفریح کے لیے شیخ بدین کے مقام پرپارک کی تعمیرکاکام جاری ہے دوسری طرف پرندوں کی افزائش نسل وغیرہ کے لیے دھپ چپک کے مقام پرایک نیاسنٹرقائم کیاجارہاہے ۔پیسکو واپڈامیں بلوں کی ریکوری کے حوالے سے پیسکو حکام سے ڈیرہ اسماعیل خان کی عوام کی ریکوری کے اعدادوشمارحاصل کیے جائیں گے اورانشاء اللہ چند ہفتوں میں ڈیرہ اسماعیل خان پیسکو کاالگ سرکل قائم کردیاجائے گا۔انہوں نے کہاکہ خیبرپختونخوا کی صوبائی کابینہ مختصرہوگی اوروزارت جنوبی اضلاع کوبھی دی جائے گی ۔ وزیرصحت خیبرپختونخواصوبے میں صحت کی سہولیات کے حوالے سے دن رات کوشاں ہیں ۔ دس کروڑروپے کی لاگت سے سولر لائٹس لگانے کے حوالے سے ٹینڈرزہوچکے ہیں اوریہ سولر لائٹس پارکس ، چوکوں ، محلہ جات کی مساجداورعوامی مقامات کے علاوہ دریابندوغیرہ پرلگائی جائیں گی ۔ فوڈ سٹریٹ کی بلڈنگ کا کام دریابندپرمکمل ہوچکاہے اورجلد ہی فوڈسٹریٹ کام شروع کر دے گی ۔ خیبرپختونخوامحکمہ تعلیم میں 8ہزار سے زائد اساتذہ بھرتی کیے جائیں گے جن میں250کے قریب اساتذہ ڈیرہ اسماعیل خان میں بھرتی ہوں گے ۔ایک سو بوسیدہ تعلیمی اداروں کی عمارات کوہٹاکرنئے پرائمری سکولز تعمیر کیے جائیں گے ۔انہوں نے کہاکہ چشمہ لفٹ کینال پراجیکٹ پرجون 2019میں کام شروع ہوجائے گااوراس پراجیکٹ کو سی پیک میں شامل کرلیاگیاہے اسی طرح بیرونی سرمایہ کاروں سے رابطے میں ہیں اورہماری کوشش ہوگی کہ ڈیرہ اسماعیل خان میں بھی زنانہ مردانہ ماڈل سکولزقائم کیے جائیں جن میں تربیت یافتہ اساتذہ کے علاوہ مفت کتب بھی فراہم ہوسکیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...