نوشہرہ ،ملکیتی اراضی پر قبضہ کی کوشش کی جارہی ہے ،ذاکر خٹک

نوشہرہ ،ملکیتی اراضی پر قبضہ کی کوشش کی جارہی ہے ،ذاکر خٹک

نوشہرہ(بیورورپورٹ)رشکئی کے عوام نے محکمہ ریلوے اور مقامی انتظامیہ کی جانب سے ناروا تجاوزات کے خلاف جعلی اپریشن کے خلاف روڈ بلاک کرنے اور احتجاج کا اعلان کردیا ہماری ملکیتی زمینوں پر محکمہ ریلوے اسسٹنٹ کمشنر کی مدد سے قبضہ کرنا چاہتے ہیں جو ہم کسی صورت بھی برداشت نہیں کرسکتے یہ ہمارے اباؤ اجداد نے 1912 میں انتقالات کے ذریعے خریدی تھی لیکن تحریک انصاف کی حکومت اپنے مخالفین کو انتقامی کاروائیوں کا نشانہ بناتے ہوئے ان کو دربدر ٹھوکریں کھانے پر مجبور کررہے ہیں محکمہ ریلوے اور اسسٹنٹ کمشنر نوشہرہ عدالتی حکم امتناعی کے باوجود ان کی خلاف ورزی کرتے ہوئے تجاوزات کی آڑ میں ملکیتی زمینوں کے مالکان کو تنگ کررہے ہیں مذکورہ اداروں نے توہین عدالت کرتے ہوئے ان کے حکم درآمد کرنے سے انکاری ہیں ان خیالات کااظہار ذاکر خٹک، کامران ایڈوکیٹ، خوشحال خان، راشید، افتخار اور بہار علی نے رشکئی کے عمائدین علاقہ کے ہمراہ نوشہرہ پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ رشکئی کے مقام پر ریلوے لائن سے دور ہماری ملکیتی زمین پر محکمہ ریلوے کی ایماء پر مقامی انتظامیہ جبراً قبضہ کرنا چاہتی ہے ہماری یہ زمین کا ریلوے لائن سے کوئی تعلق نہیں بلکہ یہ زمین ان سے فاصلے پر ہے اور ان کے باقاعدہ انتقالات کے کاغذات ہمارے پاس موجود ہے لیکن اس کے باوجود محکمہ ریلوے ہماری زمینوں پر جبراً قبضہ کرناچاہتی ہے ہم نے محکمہ ریلوے کے ناجائز قبضے کے خلاف مقامی عدالت سے حکم امتناعی بھی لیا ہے لیکن عدالت کے احکامات کو روندتے ہوئے محکمہ ریلوے اور اسسٹنٹ کمشنر نے بلاجواز کاروائیاں شروع کررکھی ہے اگر یہ لوگ اپنی حرکتوں سے باز نہ آئیں تو ہم رشکئی مین روڈ کو ہرقسم کی ٹریفک کیلئے بند کرکے بھرپور مظاہرہ کریں گے اور تمام نقصان کے ذمہ دار حکومت اور ریلوے انتظامیہ ہوگی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...