محنت کشوں ، سول سوسائٹی نمائندوں کی صدرمملکت سے ملاقات

محنت کشوں ، سول سوسائٹی نمائندوں کی صدرمملکت سے ملاقات

کراچی (این این آئی) مزدور رہنما ؤں اور سول سوسایٹی کے نمائندوں نے صدرِ پاکستان سے ہونے والے ملاقات میں محنت کشوں اور سو ل سوسائٹی کو درپیش مسائل کی روشنی میں صدرِ پاکستان کو چارٹر پیش کیا جس میں آئین کے آرٹیکل 17 کے تحت ہر شہری کو فراہم کردہ انجمن سازی کے حق کو یقینی بنانے ، آئی ایل او کنوینش کی روشنی میں انجمن سازی اور سی بی اے کا پبلک اور پرائیویٹ سیکٹر میں یقینی بنانے ، سو ل سو سائٹی کو مختلف اداروں کی طرف سے حراساں کرنے اور جبری شرائط مسلط کرنے کے بارے میں آگاہی تحریری طور پر پیش کی گئی ، ملک بھر میں تھرڈ پارٹی کنٹریکٹ، ڈیلی ویجز اور کنٹریکٹ کے ذریعے کلریکل اور نان کلریکل کیڈرز میں ملک کے دستور کے برعکس کی جانے والی بھرتیوں کے بارے میں تحریری طور پر سپریم کورٹ کے فیصلوں کی روشنی میں آگاہ کیا گیا کہ ملک بھر میں تمام ادارے آئین کے بنیادی حقوق کے تمام آرٹیکلز کی خلاف ورزی کرکے آئین کی نہ صرف خلاف ورزی کررہے ہیں بلکہ استحصال میں اضافہ کر رہے ہیں،صدرِ پاکستان کو تمام تشویشناک حالات کے بارے میں مکمل آگاہی دی گئی، بلوچستان میں کانوں میں مسلسل ہلاکتوں کے بارے میں آگاہ کیا گیا کہ محنت کشوں کو انصاف فراہم کیا جائے، اقلیتوں کے حقوق کی مسلسل پامالی کی جارہی ہے اس پر وفاقی اور صوبائی حکومتوں اپنی ذمہ داری ادا نہیں کر رہی اس سلسلے میں انصاف فراہم کرنے کے بارے میں مطالبہ کیا گیا، جی ایس پی پلس کے یورپیشن معاہدے کی روشنی میں محنت کشوں کو ریاست نے انصاف فراہم نہ کیا تو یہ معاہدہ ختم ہونے کا اندیشہ ہے جس سے نہ صرف ملک بہت بڑے پیمانے پر ایکسپورٹس میں نقصان ہو گا بلکہ محنت کش کو بھی بے روزگاری کا خطرہ ہے اور میڈیا کی صنعت میں جس طرح کریک ڈاؤن کرکے ورکرز کو جبری برطرف کیا جا رہے اس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے ۔ان تمام مسائل کو حل کرنے کی صدرِ پاکستان کی طرف سے حل کرنے کی یقین دہانی کرائی گئی جو کہ خوش آئند اقدام ہے۔ پریس کانفرنس میں مزدور رہنما لیا قت علی ساہی، ناصر منصور، سول سوسائٹی کے رہنما کرامت علی، تحسین جاوید، انیل ، بشرہ آرئیں اور دیگر شامل تھے۔

صدر ملاقات

مزید : علاقائی


loading...