پاکستان کی قطر کو سی پیک اقتصادی زونز میں سرمایہ کاری کی پیشکش

پاکستان کی قطر کو سی پیک اقتصادی زونز میں سرمایہ کاری کی پیشکش
پاکستان کی قطر کو سی پیک اقتصادی زونز میں سرمایہ کاری کی پیشکش

  


دوحہ/ اسلام آباد (اے پی پی)پاکستان اورقطرکی قیادت نے دوطرفہ تعلقات پر اطمینان کا اظہارکرتے ہوئے مشترکہ رکاوٹوں پر قابو پانے کیلئے عملی تعاون اورہم آہنگی کی اہمیت اوروسیع تر علاقائی ترقی اورپیش رفت کیلئے مشترکہ حکمت عملی وضع کرنے کی ضرورت پرزوردیاہے ،یہ اتفاق رائے وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی کے ایک روزہ دورہ قطر کے دوران دوحہ میں قطر کی اعلیٰ قیادت کے ساتھ ملاقاتوں میں طے پایا، ملاقاتوں میں پاکستان کی جانب سے قطر کی کمپنیوں کوپاک چین اقتصادی راہداری کے تحت قائم خصوصی اقتصادی زونز میں سرمایہ کاری اورمشترکہ منصوبوں کی پیشکش بھی کی گئی، دونوں ممالک نے اقتصادی، تجارتی اورسرمایہ کاری کے شعبوں میں پیش رفت میں مزید تیزی لانے پربھی اتفاق کیا ۔

وزارت خارجہ کی طرف سے جاری بیان کے مطابق شاہ محمود نے دوحہ میں قطر کے وزیر اعظم شیخ عبداللہ بن نصر بن خلیفہ الثانی، قطر کے نائب امیر شیخ عبداللہ بن حماد الثانی اور نائب وزیر اعظم و وزیر امور خارجہ شیخ محمد بن عبد الرحمن الثانی سے ملاقاتیں کیں،فریقین نے دوطرفہ تعلقات پر اطمینان کا اظہارکیا ،دورہ قطر کے دوران وزیرخارجہ نے قطر سمیت اہم ترین علاقائی اور پڑوسی ممالک کے ساتھ تعلقات کے فروغ کیلئے وزیراعظم عمران خان کے وڑن پرروشنی ڈالی ،ا علٰی سطح پرروابط کے فروغ کے جذبہ کے تحت وزیراعظم عمران خان جنوری 2019 ءمیں قطر کادورہ کریں گے ،شاہ محمودقریشی نے قطر کی قیادت کو افغانستان میں قیام امن سے متعلق حالیہ پیش رفت سے بھی آگاہ کیا،انہوں نے افغانستان میں امن اورمصالحت کیلئے اولین بنیاد رکھنے میں امیرقطر کی دوراندیشی کوبھی سراہا،وزیرخارجہ نے کہاکہ افغانستان اورخطے میں طویل اوردیرپا استحکام کی حالیہ کوششوں کے ضمن میں وسیع تر علاقائی ہم آہنگی کویقینی بنانے کیلئے پاکستان قطر کے درمیان قریبی اورباقاعدہ رابطے معاون ثابت ہوسکتے ہیں ،انہوں نے قطرکی قیادت کویقین دلایا کہ پاکستان قطرکے ساتھ دوطرفہ سیاسی، اقتصادی اوردفاعی تعلقات کو مزیدمضبوط بنانے کیلئے پرعزم ہے ۔

وزیرخارجہ نے قطرکی جانب سے پاکستان میں ویزاسنٹرز کے قیام پر اطمینان کااظہارکیا اورکہا کہ ان مراکز کے قیام سے ایک لاکھ پاکستانی ورکروں کو قطر میں روزگار کیلئے بھیجنے کاکام برق رفتاری سے آگے بڑھے گا ،وزیرخارجہ نے 2022ءمیں قطر میں منعقد ہونے والے فٹ بال کے عالمی کپ کیلئے پاکستان کی پیشہ و رانہ مہارت کی حامل افرادی قوت کی فراہمی کی پیشکش کی اورکہاکہ اس وقت بھی قطر میں ایک لاکھ 40 ہزار پاکستانی مختلف شعبوں میں خدمات سرانجام دے رہے ہیں ، یہ افرادی قوت تعلقات کیلئے مضبوط بنیادیں فراہم کررہی ہے ، شاہ محمود نے کہا کہ قطر قابل اعتبار دوست ہے اس نے ہمیشہ افغان مفاہمتی عمل میں ہمارے موقف کی تائید کی، ملاقاتوں میں اس بات پراتفاق کیا گیاکہ مشترکہ وزارتی کمیشن اور2019ءکی پہلی سہ ماہی میں دوحہ میں دوطرفہ سیاسی مشاورت میں نئی راہیں اورمواقع ڈھونڈنے پر توجہ مرکوزکی جائیگی،شیخ عبداللہ بن حمادالثانی نے دورہ قطر پروزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا شکریہ اداکیا اورپاکستان میں دیرپا امن،ترقی اورخوشحالی کیلئے نیک خواہشات کا اظہارکیا ۔

انہوں نے کہاکہ قطر وزیراعظم عمران خان کے دورہ کیلئے چشم براہ ہے ، وزیراعظم پاکستان کے دورہ قطر سے دونوں ممالک کے درمیان تعلقات میں نئے باب کا آغازہوگا ، شاہ محمود قریشی نے قطر کے نائب امیر شیخ عبداللہ بن حماد الثانی سے بھی ملاقات کی ،قطرکے نائب امیر نے خطے میں امن و استحکام کے لئے پاکستان کی کوششوں کو سراہا ، قطری وزیر خارجہ نے کہا کہ ہم جلد مزید پاکستانیوں کو قطر میں ملازمت کے مواقع مہیا کریں گے ، ملاقات میں دونوں وزرائے خارجہ نے دوطرفہ تجارت کو مزید فروغ دینے پر اتفاق بھی کیا ،قطر کے وزیر خارجہ نے شاہ محمود قریشی کے اعزاز میں ظہرانہ دیا ۔

دریں اثنا شاہ محمود قریشی نے پاکستانی سفارت خانے کے افسران و کمیونٹی نمائندوں سے خطاب کر تے ہوئے کہا کہ ہم نے معاشی سفارتکاری کا باقاعدہ آغاز کر دیا ،قطر کی قیادت کے ساتھ ملاقاتیں انتہائی سودمندرہیں ، جلد خوشخبریاں ملیں گی ، قبل ازیں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی جب ایک روزہ سرکاری دورہ پر دوحہ پہنچے تو حمد انٹرنیشنل ا یئر پورٹ پر چیف آف پروٹوکول، وزارت خارجہ قطر، سفیر ا براہیم یوسف اور پاکستانی سفارتخانے کے سینئر حکام نے ان کا استقبال کیا۔وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی قطر کا ایک روزہ دورہ مکمل کرکے رات گئے وطن واپس پہنچ گئے۔

مزید : قومی /عرب دنیا /علاقائی /اسلام آباد


loading...