عملہ صفائی کی تنخواہیں، سی ڈی اے،کارپوریشن میں مزیدبحران کا خدشہ

  عملہ صفائی کی تنخواہیں، سی ڈی اے،کارپوریشن میں مزیدبحران کا خدشہ

  



اسلام آباد(آن لائن) میٹرو پولیٹن کارپوریشن اور وفاقی ترقیاتی ادارے سی ڈی اے کے درمیان فنڈز کے حوالے سے مزید بحران پیدا ہونے کا خدشہ ہے۔ اس بحرانی صورتحال سے بچنے کیلئے میٹرو پولیٹن کارپوریشن اسلام آباد کے چیف آفیسر نے (ایم سی آئی) کے فنڈز کو سی ڈی اے اکاؤنٹ میں منتقلی میں منظوری حاصل کرنے کیلئے سیکرٹری داخلہ سے رجوع کرنے کا فیصلہ کیا ہے تاکہ صفائی کے عملے کوتنخواہوں کی بروقت ادائیگی یقینی بنائی جاسکے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ایم سی آئی کے کھاتے میں ڈیڑھ ارب روپے موجود ہیں لیکن میئر اسلام آباد کے مطابق وہ مالی قوائد و ضوابط کی عدم موجودگی کے باعث اس رقم کا استعمال نہیں کرسکتے جس کے نتیجے میں سی ڈی اے ایم سی آئی کے صفائی کے عملے کوتنخواہوں کی ادائیگی کرتا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ چیف آفیسر ہمایوں اختر جو سی ڈی اے کے ممبر انجینئرنگ اور ایم سی آئی کے پرنسپل اکاؤنٹ آفیسر بھی ہیں اور میئر شیخ انصر عزیز اس رقم کے لو گر ہیڈ ہیں جبکہ میئر اسلام آباد نے دعویٰ کیا ہے کہ وفاقی حکومت کی ہدایت کے مطابق سی ڈی اے صفائی عملے کو تنخواہوں کی ادائیگی کا پابند ہے لیکن سی ڈی اے ذرائع کا موقف ہے کہ تنخواہوں کی ادائیگی کیلئے ایم سی آئی مکمل طور پر ذمہ دار ہے اور شہری ایجنسی کا اس سے کوئی لینا دینا نہیں۔

بحران خدشہ

مزید : پشاورصفحہ آخر