ہر سال ڈیڑھ کروڑ لوگ فالج کا شکار ہوتے ہیں‘ مقررین 

  ہر سال ڈیڑھ کروڑ لوگ فالج کا شکار ہوتے ہیں‘ مقررین 

  



ملتان (نیوز رپورٹر) مختار اے شیخ ہسپتال انتظامیہ کی جانب سے 29 دسمبر کو پاکستان سوسائٹی آف نیورولوجی کے اشتراک سے جنوبی پنجاب میں پہلی سٹروک کانفرنس کے انعقاد کیا گیا۔ جس میں ملک بھر سے دماغی امراض کے ڈاکٹرز نے شرکت کی۔ کانفرنس ڈاکٹر احتشام خالد(سینئر کنسلٹنٹ/ ہیڈ آف ڈیپارٹمینٹ نیورولوجی-مختار اے شیخ ہسپتال) کی زیر نگرانی اہتمام کیا گیا تھا،جن کو ابتدائی فالج کی تشخیص اور علاج میں مہارت حاصل ہے- کانفرنس میں مختلف ڈاکٹرز نے فالج، اس کی علامات اور اس(بقیہ نمبر35صفحہ7پر)

 کے علاج کے متعلق اپنی اپنی را?ے کا اظہار کیاجس میں انہوں نے بتایا کہ فالج ایک عام بیماری ہے- دنیا میں ہر سال تقریبا ڈیڑھ کروڑ لوگ فالج کی بیماری کا شکار ہوتے ہیں۔ یہ چھوٹی عمر سے لے کر بڑی عمر کے لوگوں کو ہوسکتاہے اور خاص طور پر بڑی عمر میں زیادہ ہونے کا امکان ہے- فالج شدہ مریضوں کے علاج کو بہتر بنانے کے لئے ماہر امراض اور نرسز کے علاوہ تھراپسٹ کا ہونا بھی ضروری ہے- انہوں نے بتایا کہ روزانہ ورزش، بلڈ پریشر،شوگر کو کنٹرول کرنے اور تمباکونوشی سے پرہیز سے فالج کے ہونے کے امکان کو کم کیا جا سکتا ہے۔ کانفرنس کے اختتام پر سوالات اور جوابات کا سیشن رکھا گیا، جس میں سامعین کے سوالات کے جوابات دیئے گئے- ڈاکٹرز نے ہسپتال کے مختلف امراض کے شعبوں سمیت فالج کے شعبے کا دورہ بھی کیا اور انہوں نے ہسپتال کی خدمات کو سراہا۔

فالج 

مزید : ملتان صفحہ آخر