تبدیلی وہ جو نظر آئے…………پنجاب ترقی وخوشحالی کی راہ پر گامزن

تبدیلی وہ جو نظر آئے…………پنجاب ترقی وخوشحالی کی راہ پر گامزن

  



onlinephto\30-12-2019\ARTICLE BY JAVED YOUNIS

بزدار حکومت عوامی خدمت کے سفر پر رواں دواں 

جلالپور کینال کا منصوبہ121سال قبل بنایا گیا،تعمیر کا اعزاز تحریک انصاف کی حکومت کو ملا

صوبائی کابینہ کے 22ویں اجلاس میں ایک درجن سے زائد فیصلے

وزیراعظم کے کلین اینڈ گرین پاکستان کے وژن کو عملی جامہ پہنانے کے لئے 

کلین اینڈ گرین انڈکس پنجاب اور کلین اینڈ گرین پنجاب مہم کا افتتاح

تحریر:  جاوید یونس

بانی پاکستان قائداعظم محمد علی جناح کی ولولہ انگیز،باہمت اور دانش مندانہ قیادت میں برصغیر کے مسلمانوں نے اپنی جان ومال کا نذرانہ دے کر ایک علیحدہ مملکت حاصل کی۔یوں دنیا کے نقشے پر پاکستان کے نام سے نیا ملک ابھرا۔قائداعظم کا بنیادی مقصد پاکستان کواسلامی فلاحی وجمہوری مملکت بنانا تھا تاکہ یہاں پر نہ صرف مسلمان بلکہ تمام اقلیتیں آزادی سے اپنی اپنی مذہبی رسومات ادا کرنے کے ساتھ ساتھ بغیر کسی دباؤ،خوف کے اپنی زندگیاں گزار سکیں۔قائداعظم نے ملک تو بنا دیا مگر زندگی نے انہیں اس میں رنگ بھرنے اور اسے ٹھوس بنیادیں فراہم کرنے کی مہلت نہ دی۔ان کے جانے کے بعد جو بھی حکومتیں برسراقتدار آئیں انہوں نے قائد کے اصولوں کو پس پشت ڈال دیا اور اقتدار کی نہ ختم ہونے والی بندر بانٹ شروع ہو گئی۔ملک سیاسی،اقصادی اور معاشی لحاظ سے بہت پیچھے چلا گیا۔بعد میں آزاد ہونے والے ممالک آج ترقی یافتہ ممالک کی صف میں شامل ہو چکے ہیں۔

وزیراعظم عمران خان کی قیادت میں تحریک انصاف کی حکومت وطن عزیز کو حقیقی معنوں میں قائداعظم محمد علی جناح کے فرمودات اور شاعر مشرق علامہ اقبال کے اقوال کی روشنی میں اسے چلانے کے لئے سرگرم عمل ہے۔حکومت کے جامع،ٹھوس اور مربوط اقدامات کی بدولت ملک کی معاشی واقتصادی صورت حال میں بہتر ی آئی ہے جس کا اعتراف بین الاقوامی اداروں نے بھی کیا ہے۔وطن عزیز کے سب سے بڑے صوبے پنجاب کی با گ ڈور عمران خان نے سردار عثمان بزدار کے حوالے کی ہے۔وزیراعلی عثمان بزدار عوامی فلاحی وبہبوداور صوبہ کی ترقی وخوشحالی کے لئے بھرپور عملی اقدامات اٹھارہے ہیں جس کے ثمرات عوام تک پہنچا شروع ہو گئے ہیں۔گزشتہ سواسال کے دوران جو کام بزدار حکومت نے کئے ہیں ان کی ماضی میں مثال نہیں ملتی۔ان کی خوبی یہ ہے کہ خاموشی سے اپنا کام کرتے جارہے ہیں۔وہ ماضی کے حکمرانوں کی طرح سرکاری پیسے سے ذاتی تشہیر نہیں کرتے۔سابقہ حکمران ایک منصوبہ جو کہ شروع نہیں ہوتا تھاان کی تشہیر شروع کر دیتے۔وزیراعلی عثمان بزدار نے ہر شعبے خواہ وہ صحت ہو یا تعلیم،زراعت ہو یا آبپاشی،انڈسٹری ہو یا لیبر،سیاحت کا شعبہ یا مواصلات کا انہوں نے ریکارڈ کام کئے ہیں۔اس عرصہ کے دوران حکومت پنجاب نے مختلف شعبو ں میں آٹھ پالیسیاں تیار کی ہیں اور ان پر عملدرآمد جاری ہے۔ صوبہ میں نہ صرف نئی یونیورسٹیاں،نئے ہسپتال قائم کئے جارہے ہیں بلکہ پہلے سے موجود تعلیمی وصحت کے اداروں کو اپ گریڈ کیا جارہا ہے۔تحصیل ہیڈکوارٹرز،بنیادی مراکز صحت اور ضلعی ہیڈ کوارٹرز ہسپتالو ں میں جدید آلات ومشینری فر اہم کی جارہی ہے تاکہ لوگوں کو علاج معالجہ کی جدید سہولیات فراہم کی جا سکیں۔نوجوان نسل کو زیور تعلیم سے آراستہ کرنے کے لئے تعلیمی اداروں کو اپ گریڈ کرنے کے ساتھ ساتھ عدم دستیاب سہولیات کی فراہمی کے لئے خطیر رقم مختص کی گئی ہے۔بزدار حکومت نے اتنے کم عرصہ میں ریکارڈ قانون سازی کرتے ہوئے 30قوانین اسمبلی سے پاس کروائے ہیں اور مزید 35سے زائد بل صوبائی اسمبلی میں پیش کئے جارہے ہیں۔ وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار کی عوامی فلاح کے لئے کمٹمنٹ کا اندازہ اس بات لگایا جا سکتا ہے کہ سوا سال کے دوران صوبائی کابینہ کے ریکارڈ اجلاس منعقد کئے جا چکے ہیں جن میں متعدد اہم فیصلے گئے ہیں۔ گزشتہ دنوں وزیراعلی عثمان بزدار کی قیادت میں صوبائی کابینہ کا 22واں اجلاس منعقد ہوا جس میں ایک درجن سے زائد فیصلے کئے گئے ہیں۔

پنجاب کابینہ کے اجلاس میں پیرول ایکٹ 2019ء کی منظوری دی گئی جبکہ اجلاس میں پنجاب بائیو انرجی کمپنی پرائیویٹ لمیٹڈ کو بند کرنے کافیصلہ کیا گیا اور کابینہ نے پنجاب بائیو انرجی کمپنی پرائیویٹ لمیٹڈ بند کرنے کے فیصلے کی منظوری دی-محکمہ سکولز ایجوکیشن پنجاب کی اسسمنٹ پالیسی فریم ورک2019ء کی منظوری دی گئی جس کے تحت پنجاب میں پانچویں اورآٹھویں جماعت کے امتحانات مرحلہ وار ختم کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔اجلاس میں دی پنجاب ایجوکیشن پروفیشنلز سٹینڈرز کونسل بل2018ئاورپنجاب کے سرکاری سکولوں میں طلباء کیلئے اردو میڈیم کتابوں کی فراہمی کی منظوری دی گئی۔پنجاب میں پہلی کلاس سے پانچویں کلاس تک اردوزبان میں تعلیم دی جائے گی اورانگریزی کو بطور مضمون پڑھایا جائے گا۔ پنجاب فارسٹ پالیسی2019ء کی منظوری دی گئی اورڈسٹرکٹ وائلڈ لائف آفیسر(گریڈ17) کے عہدے کو اسسٹنٹ ڈائریکٹروائلڈ لائف(گریڈ17)میں تبدیل کرنے کی بھی منظوری دی گئی۔ پنجاب وائلڈ لائف ایکٹ کے سیکشن 20کے تحت ضلع میانوالی میں کالا باغ پرائیویٹ گیم ریزرو کے قیام کا فیصلہ کیا گیاجبکہ پنجاب وائلڈ لائف پروٹیکڈ ایریازایکٹ2019کے مسودے کی منظوری دی گئی۔ وزیراعظم کے گلوبل سسٹینیبل ڈویلپمنٹ گولزاچیومنٹس پروگرام کے تحت پنجاب حکومت کے محکمہ تعمیرات و مواصلات، ہاؤسنگ اینڈ فزیکل پلاننگ،لوکل گورنمنٹ اورچولستان ڈویلپمنٹ اتھارٹی کے مالی سال 2016-18 ء کی خصوصی آڈٹ رپورٹ کی منظوری دی گئی۔  پنجاب لوکل گورنمنٹ فنانس کمیشن کے قیام کی اصولی منظوری دی گئی جبکہ ڈیفنس ہاؤسنگ اتھارٹی گوجرانوالہ کو سرکاری اراضی دینے کا ایجنڈا موخر کیا گیااورصوبائی وزیر قانون راجہ بشارت کی سربراہی میں کمیٹی اس معاملے کا جائزہ لیکر حتمی سفارشات پیش کرے گی۔چین کے صوبے جیانگ سو(Jiangsu)کے پبلک سکیورٹی محکمے اورپنجاب پولیس کے مابین دوطرفہ تعاون بڑھانے کیلئے مفاہمت کی یادداشت کا معاملہ کابینہ کمیٹی برائے لیجسلیٹو بزنس کے سپرد کیا گیا۔ وزیراعلی نے کہا کہ ہمارا صرف ایک ہی ایجنڈا ہے اور وہ عوام کی بے لوث خدمت ہے۔تبدیلی کی راہ میں کسی کو حائل نہیں ہونے دیں گے۔اجلاس میں امن وامان کے صورت حال پر تفصیلی غوروخوض کیا گیا۔اجلاس کو بتایا گیا کہ صوبے میں مجموعی طور پر امن عامہ کی صورتحال میں بہتری آئی ہے اور جرائم کی شرح میں کمی واقعہ ہوئی ہے - انہوں نے بتایا کہ پنجاب پولیس نے نیشنل ایکشن پلان کے تحت دہشت گردی کے خاتمے کیلئے کئے جانے والے اقدامات پرموثر عملدرآمد یقینی بنایا ہے جبکہ جرائم پیشہ عناصر کی سرکوبی کیلئے مہم کامیابی سے جاری ہے - پنجاب کابینہ نے ایجوکیشن سے متعلق کئی اہم فیصلے کئے ہیں جن میں پہلی سے پانچویں کلاس تک اردو زبان میں تعلیم دی جائے گی اور انگریزی کو بطور مضمون بڑھایا جائے گا جو ایک خوش آئند اور قابل تحسین اقدام ہے۔اگر ترقی یافتہ ملکوں چائنہ،جرمنی،فرانس وغیرہ کی تعلیمی پالیسیوں پر نگاہ ڈالیں تو انہوں نے تمام اہم کتابوں کے اپنی مادری زبانوں میں ترجمے کئے جس کا انہیں یہ فائدہ ہوا کہ نوجوانوں کو جدید علوم تک بہتررسائی میسر ہوگئی اور انہیں سمجھنا بھی آسان ہو گا۔

وزیراعظم پاکستان عمران خان کے کلین اینڈ گرین پاکستان کے وژن کو عملی جامہ پہنانے کے لئے وزیراعلی عثمان بزدار نے کلین اینڈ گرین انڈکس پنجاب اور کلین اینڈ گرین پنجاب مہم کا افتتاح کیا ہے۔۔ کلین اینڈ گرین انڈکس اورکلین اینڈ گرین مہم کو کامیاب بنانے کیلئے ڈپٹی کمشنرز سے حلف لیا۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کلین اینڈ گرین چیمپئن کی حیثیت سے پورٹل پر رجسٹریشن بھی کرائی۔موسمیاتی تغیر و تبدل، ماحولیاتی آلودگی،سموگ اور دیگر قدرتی آفات شہروں کوبری طرح متاثر کر رہی ہیں - موسمیاتی تغیرات اور ماحولیات آلودگی کے ایشوز پر قابو پانا بہت بڑا چیلنج بن چکا ہے۔وزیر اعظم عمران خان نے موسمیاتی چیلنج کو مد نظر رکھتے ہوئے عالمی فورم پر اس کے لئے آواز اٹھائی۔حکومت پنجاب سرسبز اور صاف پاکستان کے ویژن پر عمل پیرا ہے۔پنجاب لوکل گورنمنٹ ایکٹ کے تحت مقامی حکومتیں وجود میں آچکی ہیں۔کمشنرز اورڈپٹی کمشنرز کو ایڈمنسٹریٹرز کا چارج دیا گیا ہے۔ انتظامی افسران نے کلین اینڈ گرین پنجاب کیلئے نیا ٹرینڈ سیٹ کرنا ہے۔آپ لوگوں نے اس مہم کو کامیاب بنانے کیلئے بڑھ چڑھ کرحصہ لینا ہے۔جب عوام کے منتخب نمائندے آئیں گے تو وہ آپ کو رول ماڈل کے طورپر دیکھیں۔319مقامی حکومتوں میں کلین اینڈ گرین کے حوالے سے صحت مندانہ مقابلہ ہوگا۔ وفاقی سطح پر ”صاف اور سر سبز پاکستان“ کی طرز پر صوبہ میں صاف اور سر سبز پنجاب مقابلے منعقد کرائے جا رہے ہیں - ملکی سطح کے مقابلوں میں صوبہ پنجاب کے 12 شہراور خیبر پختونخواہ کے 7 شہر منتخب کئے گئے ہیں - صوبہ بھر میں نوتشکیل کردہ 319 مقامی شہری حکومتوں کے درمیان صفائی کے مقابلوں میں کلین ڈرنکنگ واٹر، سالڈ ویسٹ مینجمنٹ، ویسٹ واٹر مینجمنٹ، ہائی جین اینڈ سینی ٹیشن، سٹی بیوٹیفکیشن، کمیونٹی پارٹی سپیشن(Participation)جیسے 7 نکات کی بنیاد پر کارکردگی کے بارے میں فیصلہ کیا جائے گا- عمدہ کارکردگی دکھانے والے شہروں اور ان کی انتظامیہ کو قومی اور مقامی سطح پر سراہا جائے گا- ماحولیات اورکلین اینڈ گرین پاکستان وزیراعظم عمران خان کے دل کے بہت قریب ہے۔عالمی بینک کے تعاون سے بھی گرین ڈویلپمنٹ پروگرام شروع کررہے ہیں اوراس پروگرام کے تحت درختوں میں اضافہ کیا جائے گا۔ ہمارا ایمان ہے کہ صفائی نصف ایمان ہے۔آپ نے محنت کر کے ثابت کرنا ہے کہ پنجاب کلین اینڈ گرین مہم میں سب سے آگے ہے۔کمشنرز اورڈپٹی کمشنرز ڈلیور کر یں پنجاب حکومت ہر طرح کی معاونت فراہم کرے گی۔یہ بہت اہم منصوبہ ہے اسے کسی صورت نظر انداز نہیں کرسکتے۔ وزیراعلی نے کہا کہ ہم نے اپنی نسلوں کو صاف ستھرا ماحول فراہم کرنا ہے - یہ انتہائی اہم پروگرام ہے اور یقینا اس کے مثبت نتائج سامنے آئیں گے - حکومت کا ماحول کو بہتربنانے پر پورا فوکس ہے اور یقینا یہ مہم کامیاب ہو گی-  ہاؤسنگ سوسائٹیوں کو بھی درخت لگانے کا پابند کیا گیا ہے اور آئندہ کمپلیشن سر  ٹیفکیٹ درخت لگانے سے مشروط ہو گا- وزیر اعظم عمران خان 23 مارچ کو اس پروگرام میں نمایاں کارکردگی دکھانے والوں کا اعلان کریں گے -  وزیر اعلی نے 25 ہزار سیور مینوں اور سینٹری ورکرز کی بھرتی کی منظوری دے دی ہے -

اس میں کوئی شک نہیں کہ پاکستان میں دنیا کا بہترین نہری نظام موجود ہے جو تقریبا وطن عزیز کے ہر کونے کی زمین کو سیراب کرتا ہے اور جس سے زرعی اجناس کی شکل میں سونا اگلتی ہیں۔ضرورت اس امر کی تھی کہ نہری نیٹ ورک میں اضافہ کرتے مگر بدقسمتی سے کسی بھی حکومت نے اس طرف توجہ نہ دی۔وزیراعظم پاکستان تحریک انصاف کی حکومت ملک میں عام آدمی کی فلاح وبہبود اور خوشحالی کے لئے بھرپور اقدامات کررہی ہے۔گزشتہ دنوں وزیراعظم اور وزیراعلی عثمان بزدار نے 117کلومیٹر طویل جلال پور اریگیشن کینال کا سنگ بنیاد رکھا ہے۔جلال پور کینال کا منصوبہ 121سال قبل بنایاگیا تھا مگر اس کی تعمیر کا اعزاز تحریک پاکستان کی حکومت کو ملا ہے۔یہ پراجیکٹ پانچ سال میں تین فیزز میں مکمل ہو گا۔اس کینال کی تعمیر سے علاقہ میں خوشحالی کا نیا دور شروع ہو گا۔روزگار کے نئے مواقع پیدا ہوں گے اور کسان کو اس کی محنت کا ثمر ملے گا۔ اس کی تعمیر پر 32ارب 70کروڑ روپے خرچ کئے جائیں گے۔ تونسہ بیراج کی تعمیر کے بعد دوسرا بڑا پراجیکٹ ہو گا۔اس نہر سے 93کلومیٹر لمبی رابطہ نہریں،72اریگیشن سٹرکچرز اور 18فلڈ سٹرکچرز بنائیں جائیں گے۔ جلال پور کینال سے نہ صرف آبپاشی کے لئے وافر پانی میسر ہو گا بلکہ 40کیوسک سے زائد پینے کا صاف پانی اس علاقے کے مکینوں کو دستیاب ہو گا۔جہلم شہر کے دائیں کنارے کو سیلاب سے محفوظ رکھنے کے لئے ایک ارب 80کروڑ روپے کی لاگت سے فلڈ پروٹیکشن بند پایہ تکمیل کو پہنچ چکا ہے۔ اسی طرح دینہ اور منگلا روڈ بھی جلد مکمل ہو جائے گا جس پر ایک ارب روپے خرچ ہوں گے۔

٭article by javed younis٭ 

مزید : ایڈیشن 2