نیب آرڈیننس کے بعد تمام قیدیوں کو فی الفور رہا کیاجائے،مریم اورنگزیب

نیب آرڈیننس کے بعد تمام قیدیوں کو فی الفور رہا کیاجائے،مریم اورنگزیب

  



لاہور(این این آئی) پاکستان مسلم لیگ (ن) کی مرکزی سیکرٹری اطلاعات مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ احسن اقبال کے خلاف کرپشن، کک بیکس، کمشن اور اختیارات کے ناجائز استعمال سمیت کوئی کیس نہیں،نالائق حکومت اپنوں کو بچانے کے لئے این آر او پلس اور اپوزیشن کے بے گناہ پندرہ ماہ سے جیلوں میں قید ہیں۔ اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ دوستوں کو بچانے کے لئے نیب ترمیمی آرڈیننس اور سیاسی مخالفین کو جیلوں میں ڈالنے کے لئے نیب نیازی گٹھ جوڑ ہے،بے گناہوں کی گرفتاری اور عقوبت کے دنوں کا کون حساب دے گا؟۔انہوں نے کہا کہ احسن اقبال کاجرم نارووال کے عوام کی خدمت، محمد نواز شریف کا ساتھ دینا اور عوام کے حق کے لیے آواز بلند کرنا ہے،احسن اقبال نے اختیارات کا کیا ناجائز استعمال کیا، چیئرمین نیب کے پاس اس کا کوئی جواب ہے؟ کونسی کرپشن کی ہے، کون سا کمیشن کھایا ہے، کون سا فائدہ اٹھایا ہے؟ چیئرمین نیب کے پاس اس کا کوئی جواب ہے۔نارووال سپورٹس کمپلیکس سے پاکستان کے نوجوانوں کا فائدہ ہوا، نارووال کے لوگوں کا فائدہ ہوا، کیایہ ان کا جرم ہے؟ نیب عمران صاحب کے حکم پر سیاسی مخالفین کو اغوا کرنے کا جواب دے،احسن اقبال کا اصل جرم نالائق اور نااہل حکومت کو بے نقاب کرنا ہے،احسن اقبال کو کیوں گرفتار کیا، چیئرمین نیب کے پاس ہے اس کا کوئی جواب ہے۔ مریم اورنگزیب نے کہا کہعمران صاحب نے خود اپنے دوستوں اور حکومت کو بچانے کے لئے نیب ترمیمی آرڈیننس لائے ہیں آرڈیننس جاری ہونے سے دو روز قبل احسن اقبال کو بے گناہ اور ناحق گرفتار کیاگیا،آرڈیننس کے اجراء کے بعد مسلم لیگ (ن)سمیت اپوزیشن کے تمام بے گناہ قیدیوں کوفی الفور رہا کیاجائے،عمران صاحب اور چیئرمین نیب مسلم لیگ (ن)اور اپوزیشن کے تمام بے گناہ قیدیوں سے معافی مانگیں۔

مریم اورنگزیب

مزید : صفحہ اول