سرعام ’فحاشی پھیلانے‘ پر سعودی عرب میں 200 گرفتار

سرعام ’فحاشی پھیلانے‘ پر سعودی عرب میں 200 گرفتار
سرعام ’فحاشی پھیلانے‘ پر سعودی عرب میں 200 گرفتار

  



ریاض(مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی عرب میں سرعام فحاشی پھیلانے اور خواتین کو ہراساں کرنے کے الزام میں 200سے زائد افراد کو گرفتار کر لیا گیا۔ میل آن لائن کے مطابق 120مردوخواتین کو لباس سے متعلق قوانین کی خلاف ورزی کرنے اور عوامی جگہوں پر فحاشی پھیلانے پر گرفتار کیا گیا جبکہ 88مردوں کو ایک میوزک فیسٹیول میں خواتین کو جنسی طور پر ہراساں کرنے کے الزام میں حراست میں لیا گیا۔

رپورٹ کے مطابق رواں سال کے آغاز میں دارالحکومت ریاض میں ایم ڈی ایل بیسٹ میوزک فیسٹیول ہوا تھا جس کے بعد درجنوں خواتین نے جنسی طور پر ہراساں کیے جانے کی شکایت کی تھی۔ ریاض پولیس کی طرف سے اپنے آفیشل ٹوئٹر اکاﺅنٹ پر بتایا گیا ہے کہ گرفتار ہونے والے ان مردوخواتین کو مختلف سزائیں دی گئی ہیں جن میں جرمانے اور قید شامل ہے۔ تاہم پولیس کی طرف سے قید کی مدت اور دیگر تفصیل شیئر نہیں کی گئی۔واضح رہے کہ حالیہ سالوں میں سعودی حکومت نے جب سے قوانین میں نرمی لانے اور خواتین پر عائد کئی طرح کی پابندیاں اٹھانے کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے، تب سے یہ پہلا بڑا کریک ڈاﺅن ہے جس میں لباس اور دیگر ایسے قوانین کی خلاف ورزی پر اتنے زیادہ لوگوں کو حراست میں لیا گیا۔

مزید : عرب دنیا