”اتنے یوٹرن لئے کہ چکر آگئے“تجزیہ کار مظہر عباس کی حکومتی کارکردگی کی دلچسپ منظر کشی

”اتنے یوٹرن لئے کہ چکر آگئے“تجزیہ کار مظہر عباس کی حکومتی کارکردگی کی دلچسپ ...
”اتنے یوٹرن لئے کہ چکر آگئے“تجزیہ کار مظہر عباس کی حکومتی کارکردگی کی دلچسپ منظر کشی

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)تجزیہ کار مظہر عباس نے کہاہے کہ حکومت نے سال 2019میں اتنے یوٹرن لئے کہ چکر آگئے، یہ حکومت پہلی بار آئی ہے لیکن دوچیزں ایسی ہیں جومثبت ہیں ، ایک تو یہ ہے کہ اگر بی آرٹی کو ہٹا دیں تو اس سال کرپشن کا کوئی بڑا ایشوسامنے نہیں آیا اور دوسرا کابینہ کو مصروف رکھا گیا جوماضی میں نہیں ہوتا تھا ۔

جیونیوز کے پروگرام ”رپورٹ کارڈ“میں گفتگو کرتے ہوئے مظہر عباس نے کہا کہ اس حکومت نے سال 2019میں اتنے یوٹرن لئے کہ چکر آگئے ، نہ پولیس اصلاحات کیں اور نہ عدلیہ میں اصلاحات کی گئیں۔انہوں نے کہا کہ یہ حکومت پہلی بار آئی ہے لیکن دوچیزں ایسی ہیں جومثبت ہیں ، ایک تو یہ ہے کہ اگر بی آرٹی کو ہٹا دیں تو اس سال کرپشن کا کوئی بڑا ایشوسامنے نہیں آیا اور دوسرا کابینہ کو مصروف رکھا گیا جوماضی میں نہیں ہوتا تھا ، کابینہ کے اجلاس بڑی باقاعدگی سے ہوئے جوماضی میں نہیں ہوتے تھے ۔

مظہر عباس کا کہنا تھا کہ مہنگائی کا ایسا سونامی آیا کہ عوام کا برا حال ہوگیا ۔ سب سے بڑی بات یہ کہ ریاست مدینہ کا جودعویٰ کیا تھا ، اس کوثابت کیاجاسکتا تھا اگر سانحہ ساہیوال کے ملزموں کو باعث عبرت بنایا جاتا ۔انہوں نے کہا کہ اس سال میں حکومت اورمیڈیا کی تعلقات خراب رہے ، سول ملٹری تعلقات ٹھیک رہے لیکن جو چیلنج آگے آرہے ہیں ، ان سے سینیٹ اور قومی اسمبلی میں 2020کی ہنگامی آرائی کا آغا ز ہوگا ۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد


loading...