2020ء کسان، صحافی، دکاندار، تاجروں سمیت سب پر بھاری رہا، سراج الحق 

  2020ء کسان، صحافی، دکاندار، تاجروں سمیت سب پر بھاری رہا، سراج الحق 

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور(نمائندہ خصوصی) امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہاہے کہ پی ٹی آئی کی حکومت ایڈہاک ازم کی بنیاد پر چل رہی ہے، پی ڈی ایم میں شامل جماعتوں نے گزشتہ ادوار میں حکومتو ں کے مزے لیے اور ملک کو مسائل سے دوچار کیا،پی ٹی آئی نے ان مسائل میں مزید اضافہ کیا۔2020 ء پاکستان میں کسان، صحافی، دکاندار، تاجر سمیت سب پر بھاری رہا، جاگیردار اور سرمایہ دار کے چنگل سے آزادی حاصل کرنا ہوگی۔گزشتہ روزیہاں پر میڈیا سے گفتگو اور طلباء کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے سراج الحق نے کہاکہ پی ٹی آئی حکومت نے گزشتہ اڑھائی برس میں ملکی مسائل میں بے پناہ اضافہ کیا۔ حالات اس نہج پر پہنچ چکے ہیں کہ موجودہ سیٹ اپ کو لانے والے بھی پریشان ہیں۔
، تاہم پی ڈی ایم میں شامل جماعتیں بھی ملکی مسائل میں اضافہ کی برابر کی ذمہ دار ہیں کیونکہ اتحاد میں شامل دو جماعتوں نے ماضی میں ایک نہیں، کئی کئی بار حکومتوں کے مزے لیے اور ملکی ترقی کے لیے کوئی قدم نہیں اٹھایا۔ حقیقت یہ ہے کہ پی ٹی آئی اور پی ڈی ایم میں کوئی فرق نہیں، دونوں اطراف کے درمیان اختلاف پالیسی کے مسئلہ پر نہیں، ان کی خارجہ پالیسی ایک ہے۔ صحت اور تعلیم کی پالیسی ایک ہے، آئی ایم ایف اور ورلڈ بنک سے قرض لینے پر یہ دونوں متفق ہیں۔انہوں نے کہاکہ پی پی سندھ حکومت کی قربانی نہیں دے گی۔ پی ڈی ایم مختلف الخیال جماعتوں کا مجموعہ ہے اور سب کا اپنا اپنا ایجنڈاہے۔ ملک کو پٹڑی پر ڈالنے کے لیے نظام بدلنا ہوگا۔ سرمایہ داراور جاگیردار کے چنگل سے آزادی حاصل کرنا ہوگی۔ انہوں نے کہاکہ پی ٹی آئی کی حکومت تو آن گراؤنڈ 2020 ء میں بھی موجود نہیں ہے۔ڈے ٹوڈے اور ایڈہاک ازم کی بنیاد پر ملک کو چلایا جارہاہے۔ مہنگائی، بے روزگاری، کرپشن، بدامنی نے ملک کو گھیر رکھا ہے۔ صحافی، کسان، تاجر، دکاندار، سب بری طرح متاثر ہیں۔ سکول بند اور تعلیمی نظام مفلوج ہوا پڑا ہے۔ پاکستان میڈیکل کمیشن ایکٹ 2020کو منسوخ کرنے اور پاکستان میڈیکل اینڈ ڈینٹل کونسل ایکٹ کو بحال کرنے کابل سینیٹ میں جمع کرا رکھا ہے۔میڈیکل کے شعبہ میں طلباء وطالبات کے مسائل کے حل کے لیے پارلیمنٹ سمیت ہر فورم پر آواز بلند کریں گے۔
سراج الحق

مزید :

کامرس -