”شہبازشریف یہاں تقریر کرتے تھے تو میرا دل کرتا تھا کہ۔۔۔ “احتساب عدالت کے جج کے خواجہ آصف کے کیس میں ریمارکس

”شہبازشریف یہاں تقریر کرتے تھے تو میرا دل کرتا تھا کہ۔۔۔ “احتساب عدالت کے ...
”شہبازشریف یہاں تقریر کرتے تھے تو میرا دل کرتا تھا کہ۔۔۔ “احتساب عدالت کے جج کے خواجہ آصف کے کیس میں ریمارکس

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )احتساب عدالت نے ن لیگی رہنما خواجہ آصف کو 14 روزہ ریمانڈ پر نیب کے حوالے کر دیاہے ، عدالت نے خواجہ آصف کو  گھرسے کھانا لانے کی بھی اجازت دیدی ۔فاضل جج نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ شہباز شریف یہاں تقریر کرتے تھے تو دل کرتا تھا کہ قومی اسمبلی کا سپیکر بن جاﺅں۔
تفصیلات  کے مطابق احتساب عدالت نے خواجہ آصف کو 14 جنوری کو دبارہ پیش کرنے کا حکم جاری کر دیاہے ، عدالت نے خواجہ آصف سے نیب آفس میں اہلیہ اور وکلاءکو ملاقات کی اجازت دیدی ہے ۔کیس کی سماعت کے وکیل خواجہ آصف نے کہا کہ میں نے تمام ریکارڈ فراہم کیا جو مانگا گیا ، عدالت نے استفسار کیا کہ آپ کہاں سے ہیں ؟خواجہ آصف کے وکیل نے بتایا کہ میرا تعلق سیالکوٹ سے ہے ۔
عدالت نے کیس کی سماعت کے دوران ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ میرے پاس جب بھی کوئی ملزم لایا جاتاہے تو کہا جاتاہے کہ جوڈیشل کر دیں ، گرفتار کر نے کے بعد تفتیش تو کر نے دیں ، شہبازشریف یہاں تقریر کرتے تھے تو دل کرتا تھا کہ قومی اسمبلی کا سپیکر بن جاﺅں ۔ 
یاد رہے کہ ایک روز قبل شہبازشریف احسن اقبال کے گھر کے قریب سے نیب اہلکاروں نے حراست میں لیا تھا جس کے بعد ان کا ایک روز کا راہداری ریمانڈ حاصل کیا گیا اور انہیں نیب لاہور دفتر لایا گیا ۔ 

مزید :

قومی -