شیعہ نسل کشی مملکت خدادپاکستان کو جڑوں سے کاٹنے کے مترادف ہے، تہور حیدری

شیعہ نسل کشی مملکت خدادپاکستان کو جڑوں سے کاٹنے کے مترادف ہے، تہور حیدری

  



لاہور(ایجوکیشن رپورٹر)امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزشن پاکستان کے مرکزی صدر تہور ری نے لاڑکانہ امامبارگاہ بلاسٹ کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ کراچی اور اندرون سندھ میں جاری شیعہ نسل کشی مملکت خدادپاکستان کو جڑوں سے کاٹنے کے مترادف ہے اندرون سندھ ٹارگٹ کلنگ اورامام بارگاہوں پر حملہ پاکستان اور اسلام دشمن عناصر کی کارروائی ہے حکومت بیرونی مداخلت اور پے رول پر جاری شیعہ نسل کشی کو روکنے میں ناکام ہوچکی ہے ،حکومت سندھ سے متعدد بار احتجاج کے باوجود شیعہ ٹارگٹ کلنگ کی روک تھام کیلئے کوئی عملی اقدامات نہیں اٹھائے گئے جب تک سکیورٹی اداروں میں موجود کالی بھیڑوں کو ختم نہیں کیا جا تا یہ سلسلہ تھمنے والا نہیں ہے پاکستان میں استحکام اور امن ، انتہاپسندوں کے خاتمہ کیساتھ ساتھ انتہاء پسند سوچ کا خاتمہ بھی ضروری ہے پاکستان میں امن انتہاء پسند سوچ کے خاتمہ میں مضمر ہے پائیدار امن کیلئے حکومت اور سیکیورٹی اداروں کو اپنا کردار ادا کرنا ہوگا مرکزی صدر کاکہنا تھا کہ ہمارے حوصلے پست ہونے والے نہیں ملت تشیع کا ماضی شہادتوں سے سرخ ہے سانحہ پشاور کے بعد قوم متحد ہو کر پاک فوج کے شانہ بشانہ کھڑی ہے جس پر دہشتگرد گروہ بوکھلاہٹ کا شکار ہوچکے ہیں اور بزدلانہ کارروائیوں میں ملوث ہوچکے ہیں

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...