کارکنوں کا قتل ،ایم کیو ایم کے تحفظات دُور کئے جائینگے :نواز شریف

کارکنوں کا قتل ،ایم کیو ایم کے تحفظات دُور کئے جائینگے :نواز شریف

  



 کراچی (آن لائن) وزیر اعظم محمد نواز شریف نے کہا ہے کہ کراچی سے ملک دشمن عناصر کا صفایا کریں گے ،دہشت گردوں کے مقدمات جلد از جلد فوجی عدالتوں میں بھیجے جائیں گے،ایم کیو ایم کے کارکن کے قتل کی جوڈیشل انکوائری کیلئے ایک ہفتے میں کمیشن بنایا جائے گا،سہیل احمد کے اہلخانہ کو انصاف فراہم کیا جائیگا،ایم کیو ایم کے تمام تحفظات دور کریں گے،وزیراعلیٰ قائم علی شاہ اور گورنر عشرت العباد سیاسی جماعتوں میں ہم آہنگی پیدا کرنے کے لئے کردار اد اکریں۔ان خیالات کا اظہار وزیر اعظم نے کراچی گورنر ہاؤس میں امن وامان کی صورت حال کے حوالے سے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس سے قبل وزیر اعظم نواز شریف کراچی ائیر پورٹ پر پہنچے تو وزیر اعلیٰ سندھ قائم علی شاہ نے وزیر اعظم کا استقبال کیا ۔اس موقع پر وزیر داخلہ چودھری نثار علی خان اور وزیر خزانہ اسحاق ڈار بھی وزیر اعظم کے ہمراہ تھے۔ وزیر اعظم نواز شریف بذریعہ ہیلی کاپٹر گورنر ہاؤس پہنچے جہاں پر گورنر سندھ عشرت العباد نے استقبال کیا ۔وزیر اعظم کی زیر صدارت اجلاس میں ڈی جی رینجرز اور آئی جی سندھ نے کراچی میں جاری آپریشن اور امان وامان سے متعلق رپورٹ پیش کی ۔اس موقع پر وزیر اعلی سندھ نے قومی ایکشن پلان پر عملدرآمد کے حوالے سے بریفنگ دی ۔قائم علی شاہ نے بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ قومی ایکشن پلان پر عملدرآمد کے لئے 5 کمیٹیاں تشکیل دے دی گئی ہیں اور قومی ایکشن کے20 نکات میں سے 14 نکات پر عملدرآمد کے لئے حکمت عملی تیار ہے اور دہشت گردی کے کیس دس روز میں سکروٹنی کر کے فوجی عدالتوں میں بھیجے جائیں گے۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نواز شریف نے کہا کہ ملک میں دہشت گردوں کے خلاف سخت ایکشن لیں گے،دہشت گردی کرنے والے ملک کی معیشت کو نقصان پہنچانا چاہتے ہیں۔کراچی میں امن وامان کی بحالی حکومت کی پہلی ترجیح ہے،سب مل کر دہشت گردی کے ناسور کا خاتمہ کریں گے ۔اجلاس سے قبل وزیر اعظم نواز شریف نے وزیر اعلیٰ سندھ قائم علی شاہ اور گورنر عشرت العباد سے ملاقات کی جس میں کراچی میں سیاسی اور امن وامان کی صورت حال پر تفصیلی تبادلہ خیالات کیا گیا ۔اس موقع پر وزیر اعظم نے کہا کہ وزیر اعلیٰ سندھ قائم علی شاہ سیاسی ہم آہنگی کے لئے کردار اد اکریں جبکہ گورنر سندھ اور وزیراعلیٰ سندھ کراچی میں دو بڑی جماعتوں میں ہم آ ہنگی پیدا کریں،مسائل کو مذاکرات کے ذریعے حل کئے جائیں ان مسائل کو صوبائی سطح پر ہی حل ہوناچاہیے۔پیپلز پارٹی اور ایم کیو ایم کراچی میں جاری آپریشن کو کامیاب بنائیں۔وزیر اعظم نے کہا کہ گورنر سندھ نے ہمیشہ سیاسی محاذ آرائی میں اپنا اہم کردار ادا کیا ہے ۔وزیر اعلی قائم علی شاہ سندھ کی تمام سیاسی جماعتوں سے رابطے کریں اور سیاسی ہم آہنگی پیدا کر کے جمہوریت کو مستحکم بنائیں،سیاسی مسائل کا حل صرف اور صرف مذاکرات سے ہو سکتے ہیں۔بعد ازاں گورنر ہاؤس میں وزیر اعظم سے ایم کیو ایم کے وفد نے ملاقات کی، وفد فاروق ستار،بابرغوری، حیدرعباس رضوی اور قمر منصور شامل تھے۔ایم کیو ایم نے وزیر اعظم نواز شریف کو کراچی میں جاری آپریشن اور ایم کیو ایم کے کارکنوں کے قتل کے حوالے سے اپنے تحفظات سے آگاہ کیا۔وزیر اعظم نے ایم کے ایم کے وفد کو ان کے تمام تحفظات دور کرانے کی یقین دہانی کرائی اور سہیل احمد کے قتل کی جوڈیشل انکوائری کیلئے صوبائی حکومت کو کمیشن بنانے کی ہدایت کردی ہے۔وزیر اعظم نے ایم کیو ایم کے مقتول کارکن سہیل احمد کے اہلخانہ سے بھی ملاقات کی اور ان سے تعزیت کی اوریقین دہانی کرائی کہ ورثاء کو انصاف ضرور فراہم کیا جائیگا۔انہوں نے کہا کہ سہیل احمد کا ماورائے آئین قتل ہوا ہے کارروائی ضرور ہوگی ۔غلط کام کرنے والے کو قانون کے مطابق سزا دی جائے گی،قانون کی گرفت سے کوئی نہیں بچ سکتا ۔

مزید : صفحہ اول


loading...