اسلامی ممالک چند مدارس کو فنڈنگ کر رہے ہیں ،وزارت داخلہ

اسلامی ممالک چند مدارس کو فنڈنگ کر رہے ہیں ،وزارت داخلہ

  



 اسلام آباد(آن لائن)وفاقی وزارت داخلہ نے ایوان بالا کو بتایا ہے کہ اسلامی ممالک چند مدارس کو فنڈنگ کررہے ہیں ، حکومت ان فنڈنگ کے استعمال کی نگرانی کررہی ہے ۔ جمعہ کے روز سینٹ میں وقفہ سوالات کے دوران سیدہ صغریٰ امام کے سوال پر وزیر داخلہ کی جانب سے ایوان کو تحریری طور پر بتایا گیا کہ مسلم ممالک کی طرف سے کی گئی فنڈنگ کو اینٹی منی لانڈرنگ ایکٹ کے تحت نگرانی کی جاتی ہے سکیورٹی کے تناظر میں غیر ملکی فنڈنگ حاصل کرنے والے مدارس کی مخصوص درجہ بندی کی گئی ہے اس امر کی نشاندہی قومی داخلی سکیورٹی پالیسی میں کی گئی ہے وزیر داخلہ نے بتایا کہ گزشتہ پانچ سالوں کے دوران ایف سی میں 27201 افراد کو تعینات کیا گیا ہے ملک میں امن وامان کے قیام پر گزشتہ سال 1006 ارب روپے خرچ کئے گئے ہیں اسلام آباد میں 2008ء میں 188کلاشنکوفیں ، 139رائفلیں 44بور کی ، 22بور رائفلیں 82عدد ، ایم ایم رائفلیں 82 عدد ، پستول 4510، ریوالورز 294، بارہ بور 611، میگزین 901، موزر 5، چھریاں 219، کارتوس 146777 ، گرنیڈ 49، خود کش جیکٹیں 14عدد شامل ہیں جو قبضے میں لی گئی ہیں ۔ وزیر داخلہ نے کہا کہ وفاقی دارالحکومت میں کیمرے نصب کرنے کے مقامات کا سروے مکمل کرلیا ہے اور ای سی سی عمارت کا ڈیزائن بھی منظور ہوچکا ہے محفوظ شہر اسلام آباد منصوبہ شروع ہوچکا ہے جون تک مکمل ہو جائے گا اقوام متحدہ کے ادارہ یونیسکو نے چھ مقامات کو تاریخی قرار دیا ہے جن میں موہنجو داڑو ، ٹیکسلا ، تخت بھائی ، مکلی ، لاہور قلعہ اور قلعہ روہستاس ہے ۔ ایوان کو بتایا گیا کہ فاٹا میں 5686 تعلیمی ا دارے موجود ہیں خواتین کیلئے 2402 اور لڑکوں کیلئے 3284 ہے ان تعلیمی اداروں میں طلباء کی تعداد 6لاکھ 9سو 67ہے ۔ وزیر داخلہ نے ایوان کو تحریری طور پر بتایا کہ سینٹورس انتظامیہ کو دھمکی ملی ہے اور حکومت نے سخت سکیورٹی انتظامات کئے ہیں ۔ سیدہ صغریٰ امام کے سوال کے جواب میں وزیر داخلہ نے بتایا کہ انسداد دہشتگردی کی پالیسی ایسا قانونی فریم ورک فراہم کرتا ہے جس سے دہشتگردی کے مالی مدد کو بند کرکے ان کے مالی نیٹ ورک کو تباہ کردیا گیا ہے کالعدم تنظیموں کی جائیدادیں ضبط کرنا بھی شامل ہے ۔ وزیر ریلوے نے ایوان کو بتایا کہ ریلوے کو منافع بخش بنا دیا ہے نئی ریلیں چلائی ہیں گزشتہ سال 65کروڑ منافع کمایا ہے جو کہ 27فیصد زیادہ ے پاکستان افغانستان کو ریلوے کے ذریعے منسلک کردیا ہے چمن سے سپین بولدک تک نیا ریلوے لنک 11.3 کلو میٹر لمبا تعمیر کررہے ہیں اس پر 1378 ملین خرچ آئینگے پشاور سے جلال آباد تک ریل لنک قائم کررہے ہیں جس کی لمبائی 143 کلو میٹر ہے اس پر 1100 امریکی ڈالر خرچ ہوں گے ۔ سیدہ صغریٰ امام کے سوال کے جواب میں وزیر سرحدی امور نے بتایا کہ آئی ڈی پیز کی تعداد خاندان 1020447 ہے اور کل افراد کی تعداد 6122827 ہے ہر ایک کو ماہانہ 12000 ، رمضان پیکج 20000 دیئے جارہے ہیں ۔ وزیر داخلہ نے بتایا کہ اسلام آباد میں زنا بالجبر کے 113 مقدمات درج ہیں گھریلو تشدد کے 326 مقدمات ہیں خواتین کے حقوق کے تحفظ کا قانون موجود ہے

مزید : صفحہ اول


loading...