3دہشتگردوں عابد اکرم ،سرفراز اور شبیر کو47,47بار سزائے موت کا حکم

3دہشتگردوں عابد اکرم ،سرفراز اور شبیر کو47,47بار سزائے موت کا حکم

  



لاہور(نامہ نگار)لاہور کی انسداد دہشت گردی عدالت نمبر Iنے ریسکیو15بلڈنگ اور حساس ادارے کے دفتر پر حملہ کیس میں ملوث تین دہشت گردوں عابد اکرم، سرفراز اور شبیر کو47،47 بار سزائے موت کا حکم سنا دیا ۔عدالت نے تینوں دہشت گردوں کو انفرادی طور پر 2کروڑ 53لاکھ،51 ہزار 500 روپے جرمانے کی سزا بھی سنائی۔ جرمانے کی اس رقم سے ہر مقتول کے ورثاء کو 5،5لاکھ روپے ادا کئے جانے کی ہدایت بھی کی گئی ہے ۔27مئی 2009 کو مسلح دہشت گردوں نے بارود سے بھری گاڑی کے ہمراہ لاہور میں ریسکیو 15 کی مرکزی بلڈنگ اور حساس ادارے کے دفتر پر حملہ کیا جس میں 26افراد جاں بحق اور 337زخمی ہوئے تھے۔ قانون نافذ کرنے والے اداروں نے حملے کے بعد سی سی ٹی وی کیمروں اور دیگر شواہد کی مدد سے حملہ آوروں کی شناخت کی اور انہیں گرفتار کیا گیا۔عابد اکرم کو لاہور کے علاقے شاہدرہ جبکہ سرفراز اور شبیر کو فیصل آباد کے نواحی علاقے سے گرفتار کیا گیا۔ اس مقدمہ کی سماعت انسداد دہشت گردی کی عدالت نے کوٹ لکھپت جیل میں کی ۔جہاں جرم ثابت ہونے پر تینوں دہشت گردوں کو مذکورہ سزائیں سنا دی گئیں۔ عدالت نے قرار دیا کہ مجرموں کے خلاف استغاثہ کی طرف سے ٹھوس شواہد پیش کئے گئے جن سے ان کا جرم ثابت ہوتا ہے اس بناء پر انہیں تعزیرات پاکستان کی دفعہ 302اورانسداد دہشت گردی ایکٹ کی دفعہ7کے تحت 47،47بار سزائے موت اور جرمانے کی سزائیں سنائی جاتی ہیں ۔

مزید : صفحہ اول